جہلم،بے جا ٹیکس وصولی پر ٹریکٹر ٹرالی مزدوروں کا ٹھیکیدار کیخلاف احتجاج

جہلم،بے جا ٹیکس وصولی پر ٹریکٹر ٹرالی مزدوروں کا ٹھیکیدار کیخلاف احتجاج

جہلم (نامہ نگار)نالہ گھان سے ریت کا زیادہ ٹیکس وصول کرنے پر غریب ٹریکٹر ٹرالیوں کے مزدوروں کا ٹھیکیدار کے خلاف احتجاج ، ٹھیکیدار ریٹ کے مطابق ریت کا ٹیکس وصول کر رہا ہے نویدمحکمہ معدنیات ۔ تفصیلات کے مطابق محکمہ معدنیات کے بلاک ملوٹ کریول 2 کے ٹھیکیدارشکیل احمد نے نالہ گھان سے ریت نکالنے والوں سے سرکاری ریٹ سے زائد وصولیاں شروع کردی ہے ۔ ملوٹ ، ڈھوک منور کے رہائشیوں و غریب ٹریکٹر ٹرالیوں کے مزدوروں نے گزشتہ روز ملوٹ چوک میں محکمہ معدنیات کے ٹھیکیدار شکیل احمد کے خلاف احتجاج کیا اور کہا کہ ہم غریب لوگ ہیں اور اپنے بیوی بچوں کا پیٹ پالنے کے لیے ٹریکٹر ٹرالیوں پر مزدوری کرتے ہیں ہمارے علاقہ سے قدیم برساتی نالہ گزر کر دریا میں شامل ہوتا ہے ہمارے علاقہ کے لوگ اپنے گھر وغیرہ کی تعمیر کے لیے اسی نالے سے مل ملی ریت استعمال کر کے اپنے گھر و دیگر عمارتیں تعمیر کرتے ہیں لیکن چند عرصہ سے ٹھیکیدار نے محکمہ کے ساتھ ملی بھگت کر کے سرکاری ریٹ سے زائد وصولیاں شروع کردی ہے جبکہ دریائی ریت جو کہ صاف شفاف ریت ہوتی ہے وہ بھی اب جو وصولیاں ٹھیکیدار کر رہا ہے وہ ہم کو مل ملی ریت دے کر دریائی ریت کے پیسے وصول کر رہا ہے ہماری حکام بالا سے اپیل ہے کہ فی الفور ٹھیکیدار کے خلاف محکمہ انکوائری کی جائے اور زائد وصولیاں کرنے پر اس کا ٹھیکہ منسوخ کیا جائے ۔ اس حوالہ سے جب انجینئر ڈپٹی ڈائریکٹر جہلم نوید سے بات ہوئی تو انہوں نے بتایا کہ یہ ریت مل ملی ہوئی ریت نہیں ہے ٹھیکیدار شیڈول کے مطابق پیسے وصول کر رہا ہے جبکہ ٹھیکیدار شکیل سے رابطہ کیا گیا تو ان کا نمبر اٹینڈ نہ ہوا ۔

مزید : راولپنڈی صفحہ آخر