اے پی بی ایف کی سی پیک کے خلاف سازشوں کی مذمت

اے پی بی ایف کی سی پیک کے خلاف سازشوں کی مذمت

کراچی (اسٹاف رپورٹر)آل پاکستا ن بزنس فورم نے 50ارب ڈالرز مالیت سے زائد کے بین الاقوامی منصوبے چین پاکستان اقتصادی راہدری(سی پیک) کے خلاف ہونے والی سازشوں کی شدید مذمت کرتے ہوئے دہشت گردی کی لہر میں حالیہ اضافے کو سی پیک منصوبے کی بروقت تکمیل اور انفرا اسٹریکچر ڈیولپمنٹ کے عمل کو سبوتاژ کرنے کی کڑی قرار دیا ہے ۔آل پاکستا ن بزنس فورم کے صدر ابراہیم قریشی نے حکومتی اتھارٹیز اور قانون نافذ کرنے والے اداروں پر سی پیک منصوبے کی حفاطت اور اس منصوبے کو درپیش خطرات کا مقابلہ کرنے کیلئے مزید محتاط رہنے کی ضرورت پر زور دیا ہے تا کہ اس منصوبے کا زیاد ہ سے زیادہ فائدہ اٹھا کر تجارت،ٹرانسپورٹیشن اور انفرا اسٹریکچر کے شعبوں میں انقلاب کو ممکن بنایا جاسکے۔ ابراہیم قریشی نے مزید کہا کہ آل پاکستا ن بزنس فورم سی پیک منصوبے کی کامیابی اور اس حوالے سے پاک چین مشترکہ مفادات کے تحفظ اورنئے تجارتی مواقعوں کی نشاندہی میں تعاون کی فراہمی کیلئے پر عزم ہے ،ابراہیم قریشی کا کہنا تھا کہ اس منصوبے کے تحت ملک میں بھاری غیر ملکی سرمایہ کاری آئیگی ،لہذا لازمی ہے کہ ملک بھر میں سیکورٹی کے انتہائی سخت اقدامات کئے جائیں تا کہ تجارتی و اقتصادی سرگرمیوں کو فروغ مل سکے،سی پیک منصوبے کے نتیجے میں دور دراز اور شہری سہولتوں سے محروم علاقوں میں نئے صنعتی زون قائم ہونگے جس کے نتیجے میں نہ صرف مقامی لوگوں کو روزگار کے مواقع فراہم ہونگے بلکہ یہ علاقے بھی قومی ترقی کے دھارے میں شامل ہوسکیں گے،سی پیک منصوبے میں34ارب ڈالرز سے زائد مالیت کے توانائی منصوبے بھی شامل ہیں جس کے نتیجے میں یقینی طور پر ملک میں توانائی بحران میں کمی آئیگی اور معاشی ترقی کی رفتار میں اضافہ ہوگا۔

مزید : راولپنڈی صفحہ آخر

لائیو ٹی وی نشریات دیکھنے کے لیے ویب سائٹ پر ”لائیو ٹی وی “ کے آپشن یا یہاں کلک کریں۔


loading...