پنجاب میں پختونوں سے لسانی امتیازی سلوک کو کسی صورت برداشت نہیں کیا جائگا :سیاسی جماعتیں

پنجاب میں پختونوں سے لسانی امتیازی سلوک کو کسی صورت برداشت نہیں کیا جائگا ...

نوشہرہ‘ صوابی‘ بٹ خیلہ‘ مہمند ایجنسی( نمائندگان) نو شہرہ میں قومی وطن پا رٹی کا پنجا ب میں پختونو ں کی گر فتا ریوں اور ان کی تذلیل پر پنجا ب حکومت کے خلاف زبر دست احتجا ج مظا ہر ہ مظاہر ین نے پنجاب حکومت کے خلاف شدید نعر ہ با زی کی اور پنجا ب حکومت کو خبر دار کیا کہ وہ پختونوں کی تذلیل بند کی جائے ور نہ را ہ راست اقدا م پر مجبو ر ہو جائیں گی اس سلسلے میں قومی وطن پارٹی ضلع نوشہرہ کے زیر اہتمام احتجاجی مظاہر ہ ہو ا جس کی قیا د ت ضلعی صدر ولی الرحمان نے کی احتجاجی مظاہر ے میں جنرل سیکرٹری صمد خان ،کفا یت اللہ ایڈ وکیٹ ، شرا ف الدین ایڈ وکیٹ یاسین اور دیگر عہدیدا ر وں نے خطاب کیا مظاہر ین نے نوشہرہ پریس کلب کے سامنے اور بعد از ا ں شوبرا ہ چوک میں احتجاج کیا مظاہرے سے خطاب کے دو ران مقر رین نے کہا کہ پنجا ب حکومت پختونو ں کی تذلیل بند کریں اور لسانی تعصب کو ہوا نہ دیں ہم پختونوں کی تذلیل کسی صورت بر داشت نہیں کی جائے گی اگر پنجا ب حکومت نے یہ سلسلہ بند نہ کیا تو پنجا ب حکومت کو ایسا سبق سکھا ئیں گے کہ وہ زند گی بھر یا د رکھیں گے اس ملک کے لئے پختونو ں نے ہمیشہ قربا نیاں دی ہیں عوامی نیشنل پار ٹی تحصیل نوشہرہ کے صدر جمال خٹک ، جنر ل سیکرٹر ی انجینئر حامد علی خان نے کہا پنجاب حکومت نے پختو نو ں کے ساتھ کو نار وا سلو ک شر و ع کیا ہو ا ہے اس کو کسی صورت بر دا شت نہیں کیا جا ئے گا دہشت گر دی کی جنگ میں پختو نو ں میں اپنے گو ہر نایاب کھو ئے ہیں اب دہشت گر دی کے جنگ میں آپریشن کی آڑ میں پختونو ں کی تذلیل کی جارہی ہے کہ پنجا ب حکومت نے دہشت گر دی کی آڑ میں اور سر چ آپریشن کے بہا نے پختونو ں کی پکڑ دھکڑ کا جو سلسلہ شروع کیا ہے وہ لسانی تعصب کو ہو ا دے رہے ہیں اس سے لسانی تعصب سے صوبو ں میں نفر ت پھیل رہی ہے جو کہ انتہا ئی خطر نا ک ہے لیکن پختونو ں کے نا م نہا د علم بر د ا ر عمرا ن خان اور پرویز خان خٹک پختونو ں کی اس تذلیل پر خاموش تماشا ئی بنے ہو ئے ہیں ان خیالات کا اظہار انہو ں نے عوامی نیشنل پارٹی کے ضلعی دفتر میں میڈ یا سے با ت چیت کے دوارن کیا انہوں نے کہا کہ پنجاب حکومت نے جو سلو ک ہمارے پٹھا ن بھا ئیو ں سے رو ا رکھا وہ ناقابل بر د اشت ہے پنجاب حکومت نے ہمار ے بھا ئیو ں کودہشت گر دی کے خلاف آپریشن کی آڑ میں اپنے لسا نی تعصب کی بھینٹ چڑ ھانے کا مذموم ارادہ کیا ہوا ہم اس کو کامیاب نہیں ہونے دیں گے پنجاب میں پختونوں کے ساتھ ناروا سلوک بند کیا جائے.پختون امن پسند اور محب وطن ہے.کسی کو سندھ،بلوچی،پختون یاپنجابی کی بنیاد پر گرفتار کرنااور تشدد کا نشانہ بنانا قومی یکجہتی کیلئے انتہائی خطرناک ہے . ان خیالات کا اظہار امیر جماعت اسلامی زون اکتیس ناظم ویلج کونسل سلیم خان عربی عبدالسلام ایڈوکیٹ نے یوتھ کے اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کہی. انہوں نے کہا.پاکستان ایک نظریاتی ملک ہے.اسے رنگ نسل اور قوم پرستی کی بنیاد پر تقسیم کرنا نظریہ پاکستان سے غداری کے مترادف ہوگا.پنجاب میں پشتونوں کے ساتھ ناروا سلوک فی الفور بند کیا جائے.جبکہ افعان اور پشتون شہریوں کے خلاف کاروائیوں سے حکومت کے خلاف نفرت میں اضافہ ہو رہاہے.انہوں نے کہا.پشتون محب وطن اور گزشتہ ستر سال سے پاکستان کی سرحدات کی تحفظ کر رہاہے.انہوں نے حکومت سے مطالبہ کرتے ہوئے کہا.کہکسی کو سندھ،بلوچی،پختون یاپنجابی کی بنیاد پر گرفتار کرنااور تشدد کا نشانہ بنانا قومی یکجہتی کیلئے انتہائی خطرناک ہے.جبکہ پختون امن پسند اور محب وطن ہے.انہوں نے کہا. کہ حکمران بے گناہ عوام کو ہراساں کر کی بجائے آپنی غلط پالیسیوں پر غور کریں.اورپاکستان میں معاشی دہشت گردی کا خاتمہ کئے بغیر امن وامان ممکن نہیں ہے.جبکہ ماضی میں حکمرانوں کی غلط پالیسیوں کی وجہ سے ملک دولخت ہو ہے پی پی پی تحصیل لاہور کے صدر رحیم تاز ٹھیکہ دار نے ایک بیان میں کہا ہے کہ پنجاب میں پختونوں کو بلا جواز نشانہ بنایا جارہا ہے ۔ پختون قوم نے اس ملک کے لئے ہمیشہ قر بانیاں دی ہے آج انہیں ان کی قر بانیوں کے سبب ذلیل کیا جارہا ہے حکومت پنجاب اپنی پختون دشمن پالیسی پر نظر ثانی کر نی چاہئے ان کا کہنا تھا کہ دہشت گردی کے خلاف جنگ میں صرف پختون قوم ہی ہے جنہوں نے فرنٹ لائن کا کر دار ادا کیا ہے اور سب سے زیادہ جانی و مالی قر بانیاں دی ہے چاہئے وانا آپریشن ہوں یا سوات یا وزیر ستان پختون قوم ہی نے اس ملک کے لئے اپنا گھر بھار چھوڑ کر نقل مکانی کی ہے اس کے علاوہ پاکستان بنانے میں بھی جس طرح پختون قوم نے قر بانیاں دی تھی وہ تاریخ میں سنہرے حروف سے درج ہے ان کا کہنا تھا کہ بہت آفسوس کی بات ہے کہ ایسے قوم کو آج غدار اور دہشت گرد قرار دیا جارہا ہے جو کہ نا قابل بر داشت ہے اگر یہ سلسلہ نہ روکا گیا تو پی پی پی پختونوں کے ساتھ مل کر بھر پور احتجاج کرئے گی جو کہ تخت لاہور کو ہلا کر رکھ دے گی ۔ شلمانی قومی مومنٹ کے مرکزی چےئرمین حاجی محب گل شلمانی نے کہا ہے کہ پنجاب میں پختونوں کی پکڑ دھکڑ اور ان پر تشدد سے صوبوں کے درمیان نفرت پھیلی گی ۔پختون ایک پُر آمن اور محب وطن قوم ہے اور ہمیشہ ملک و قوم کے دفاع اور استحکام کے لئے قربانیاں دئیے ہیں ۔پنجاب پولیس بغیر کسی جُرم کے پختونوں کی گرفتاریاں بند کریں ۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے صوبہ پنجاب میں پولیس کی جانب سے پختونوں کی بلا وجہ گرفتاریوں پر رد عمل کا اظہار کرتے ہوئے کیا ۔ حاجی محب گل شلمانی نے کہا کہ جب بھی پاکستان پر مشکل وقت آیا ہے تو سب سے زیادہ پختون قوم نے قربانیاں دئیے ہیں اور ہمیشہ ملک کے دفاع کے لئے سیسہ پھیلائی دیوار کی طرح کھڑے رہے ہیں لیکن بد قسمتی سے پنجاب اور ملک کے دیگر حصوں میں دہشت گردی کے حالیہ واقعات کے بعد پنجاب میں پولیس نے پختونوں کیساتھ غیر انسانی سلوک شروع کیا ہے اور بغیر کسی جرم کے پختونوں کو حوالات میں بند کیا جارہا ہے اور محب وطن محنت کش پختونوں پر زمین تنگ کی گئی ہے جس پر ہر پختون اور ہر محب وطن شدید بے چینی سے دوچار ہے اس لئے پنجاب حکومت سمیت وفاقی حکومت اور دیگر صوبے پختونوں پر بے جا ظلم و نا انصافی کو نوٹس لیں اور صوبوں کے عوام کے درمیان نفرت پھیلنے سے قبل پختونوں کے پکڑ دھکڑ کا سلسلہ بند کیا جائے ۔ پختونوں اور قبائلی عوام کے ساتھ امتیازی سلوک اور پنجاب کے شہروں میں انہیں بے جا تنگ کرنا قابل افسوس ہے۔ دہشت گردی کو لسانی اور نسلی رنگ نہ دیا جائے،جمعیت علماء اسلام کے صد سالہ عالمی اجتماع کو شایاں نشان طریقے سے منعقد کیا جائیگا۔تفصیلات کے مطا بق گذشتہ روز مہمند ایجنسی جمعیت علماء اسلام مہمند ایجنسی کا ایک اہم اجلاس جامعۃ العلوم اسلامیہ غلنئی میں زیر صدارت آمیر مولانا محمد عارف حقانی منقعد ہوا ۔جس میں جمعیت کے صد سالہ پروگرام کو بھر بور طریقے سے منا نے اور کا میاب بنا نے کے لیے مختلف امور پر بحث ہوا اور مختلف عہدیداروں کو ذمہ داریاں سونپی گئی ۔اجلاس میں ایجنسی بھر کے تمام تحصیلوں سے امراء ،اور جنرل سیکر ٹری نے شر کت کی ۔اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے جے یو آئی مہمند ایجنسی کے امیر مولانا عارف حقانی، جنرل سیکرٹری مولانا عبدالغفار صافی اور سینئر نائب امیر مولانا سمیع اللہ نے کہا کہ اپریل میں جے یو آئی کے زیر اہتمام زاخیل میں منعقد ہونے والا جمعیت کے صد سالہ عالمی اجتماع کو احسن طریقے سے منعقدکرنے اورکا میاب بنا نے کے لیے کارکنان اور نظریاتی لوگ بھرپور تیاریاں کرلے ۔تا کہ اس میں زیادہ سے زیادہ لو گوں کی شرکت یقینی بنائی جاسکے ۔ انہوں نے کہا کہ جے یو آئی کا ملک و قوم اور اسلامی قوانین کی تحفظ کا واضح پیغام اور جمہوری نظام کے لئے جدوجہد کسی سے پوشیدہ نہیں ۔ موجودہ اسلامی دنیا سمیت ملکی امن و امان اور دیگر مسائل کی حل کے لئے اس اجتماع میں تجاویز مرتب کی جائیگی ۔اجلاس میں ایجنسی بھر کی تمام تحصیلوں میں تقریبات ،جلسے اورکار نر میٹنگز منعقد کر نے پر زور دیا گیا ۔جبکہ کار کنوں کو متحرک کر نے اور پارٹی منشور اور حالات حاضرہ کے مطابق پارٹی پالیسی گھر گھر اور فرد فرد تک پہنچانے کے لیے بھی عہدیداروں کو ذمہ داریاں سونپی گئی ۔اجلاس میں پنجاب حکومت کی پختونوں اور قبائلی کے خلاف امتیازی سلوک اور پنجاب کے شہروں میں انہیں بے جا تنگ کرنے پر افسوس کا اظہار کیا گیا۔ اور مطالبہ کیا گیا کہ دہشت گردی کو لسانی اور نسلی رنگ نہ دیا جائے۔

مزید : پشاورصفحہ آخر

لائیو ٹی وی نشریات دیکھنے کے لیے ویب سائٹ پر ”لائیو ٹی وی “ کے آپشن یا یہاں کلک کریں۔


loading...