سپلیمنٹری گرانٹ کے اختیارات حاصل ہونے سے مال معاملات میں شفافیت آئیگی :انیسہ زیب

سپلیمنٹری گرانٹ کے اختیارات حاصل ہونے سے مال معاملات میں شفافیت آئیگی ...

پشاور (سٹاف رپورٹر) خیبر پختونخوا کی وزیر معدنی ترقی و محنت انیسہ زیب طاہر خیلی کی زیر صدارت بدھ کے روز پشاور میں صوبائی کابینہ کی ذیلی کمیٹی برائے سپلمنٹری بجٹ کا ایک اجلاس منعقد ہوا جس میں کمیٹی کے رکن و صوبائی وزیر خوراک حاجی قلندر خان لودھی کے علاوہ سیکرٹری محکمہ خزانہ علی رضا بھٹہ ، سیکرٹری قانون محمدعارفین خان، سپیشل سیکرٹری خزانہ ادریس خان اور ایڈیشنل سیکرٹریز مشرف خان ، عاصم خٹک اور دیگر متعلقہ حکام نے شرکت کی اجلاس میں کمیٹی نے سپریم کورٹ آف پاکستان کے فیصلے کی روشنی میں ترقیاتی منصوبوں کیلئے سپلمنٹری گرانٹس کے اختیارات کے معاملے اور دیگر متعلقہ امور پر سیر حاصل بحث کی اور عدالت عظمیٰ کے مذکورہ فیصلے کی روشنی میں ان فنڈز کے اختیارات جو کہ اب صوبائی کابینہ کے پاس ہونگے کا قانونی لحاظ سے جائزہ لیا۔ کابینہ کی ذیلی کمیٹی نے اُصولی طور پر فنڈز کے اختیارات جو اب صوبائی حکومت کی کابینہ کو دینے کا فیصلہ کیا تا ہم اس ضمن میں محکمہ قانون کے ذریعے ایڈوکیٹ جنرل سے تحریری طور پر قانونی رائے کو لازمی قراردیا گیا اجلاس میں کمیٹی کی چےئر پرسن اور صوبائی وزیرا نیسہ زیب طاہر خیلی نے کہا کہ سپلمنٹری گرانٹ کے اختیارات صوبائی کابینہ کو حاصل ہونے سے مالی معاملات میں شفافیت آئے گی اور اس اقدام سے مالی معاملات کے سلسلے میں اچھی طرز حکمرانی میں مزید بہتری آئے گی انہوں نے کہا کہ صوبائی حکومت عدالت عظمیٰ کے مذکورہ فیصلے کا احترام کرتی ہے اور سپلمنٹری گرانٹس کے اختیارات صوبائی کابینہ کو ملنے سے صوبائی کابینہ کے اختیارات میں اضافہ ہوگا۔

مزید : پشاورصفحہ آخر