بھارت میں قبرستان کی کوئی جگہ نہیں ، مردوں کو نذر آتش کیا جانا چاہئیے : جنتا پارٹی کے رکن ساکشی مہاراج نے مسلمانوں کو آگ بگولا کر دیا

بھارت میں قبرستان کی کوئی جگہ نہیں ، مردوں کو نذر آتش کیا جانا چاہئیے : جنتا ...
بھارت میں قبرستان کی کوئی جگہ نہیں ، مردوں کو نذر آتش کیا جانا چاہئیے : جنتا پارٹی کے رکن ساکشی مہاراج نے مسلمانوں کو آگ بگولا کر دیا

روزنامہ پاکستان کی اینڈرائیڈ موبائل ایپ ڈاؤن لوڈ کرنے کے لیے یہاں کلک کریں۔

ممبئی(ڈیلی پاکستان آن لائن ) بھارت میں مسلمانوں کیلئے جینا تو مشکل تھا ہی اب مرنا بھی دشوار کیا جانے ، بھارتی جنتا پارٹی کے رکن پارلیمان ساکشی مہاراج نے کہا ہے کہ بھارت میں قبرستان کی کوئی جگہ نہیں اس لیے مردوں کو نذر آتش کیا جانا چاہئیے ۔

اے آر وائے نیوز کے مابق ریاست اترپردیش سے منتخب ہونے والے رکن ساکشی مہاراج نے بھارتی حکومت سے قانون سازی کا مطالبہ کرتے ہوئے کہا تھا کہ قبرستان کیلئے کوئی جگہ مختص نہ کی جائے بلکہ تمام مردوں کو نذر آتش کرنے کیلئے ایک مشترکہ شمشان گھاٹ ہونا چاہئیے ۔

لاہور اور خیبر پختونخوا کے تعلیمی اداروں میں دہشتگرد حملوں کا خدشہ 

ا سکا کہنا ہے کہ مودی نے کہا تھا کہ قبرستان کے ساتھ شمشان گھاٹ بھی قائم کیا جائے گا مگر ہمارا مطالبہ ہے کہ قبرستان تعمیر قائم ہونے سے کاشتکاری کیلئے زمین کم ہو جائے گی اور کھیت ختم ہو جائیں گے ۔

یاد رہے گذشتہ ماہ وزیراعظم نریندر مودی نے اتر پردیش کے شہر فتح پور میں ایک انتخابی ریلی سے خطاب کرتے ہوئے کہا تھا کہ کسی بھی مذہب کے ماننے والوں کےساتھ امتیازی سلوک نہیں ہونا چاہیے اور اگر قبرستان بنتے ہیں تو شمشان گھاٹ بھی بننے چاہیں۔

مزید : بین الاقوامی