شاہدرہ، بار بار رشوت مانگنے پر خاتون نے تھانیدار کی درگت بناڈالی

شاہدرہ، بار بار رشوت مانگنے پر خاتون نے تھانیدار کی درگت بناڈالی

لاہور  (ویب ڈیسک) رشوت لے کر بھی کام نہ کنے پر خاتون نے تھانیدار کی وردی پھاڑتے ہوئے خوب درگت بناڈالی، خاتون ایک مقدمہ کی مدعیہ تھی تھانیدار عورت سے بار بار رشوت طلب کررہا تھا، ڈی ایس پی آفس کے سامنے مشتعل خاتون نے تھانیدار کو دھڑلیا۔

تفصیلات کے مطابق تھانیدار فیکٹریا یریا کے علاقہ کی رہائشی خاتون کے گھر چوری ہوگئی تھی جس میں اس کا قیمتی سامان اور نقدی وغیرہ شامل ہے۔ کئی ماہ گزرجانے کے بعد بھی خاتون کی ایف آئی آر درج نہ ہوئی تھی اور علاقہ پولیس نے متاثرہ خاتون کو خوب ذلیل و خوار کیا تھا جس کے بعد خاتون احتجاج کے طور پر تھانہ کے باہر بیٹھ گئی اور کہا کہ جب تک میری ایف آئی آر درج نہ ہوگی میں یہاں سے نہ اُٹھوں گی جس کے سبب پولیس نے چوری کی درخواست کے تحت مقدمہ تو درج کرلیا اور ملزم بھی گرفتار ہوگیا جس سے چوری شدہ کچھ سامان بھی برآمد ہوگیا لیکن تفتیشی آفیسر محمد حسین سب انسپکٹر تھانہ فیکٹری ایریا بار بار مقدمہ کی مدعیہ سے رشوت طلب کرتا رہا۔ اسی مد میں اس نے سمیرہ کوثر نامی مدعیہ مقدمہ سے 50 ہزار روپے وصول کرلئے اور مزید 25 ہزار کی ڈیمانڈ کرڈالی۔

اپنے دوست لڑکے سے ملنے جانیوالی لڑکی پراسرارطورپر جاں بحق، لڑکا نجی ہسپتال چھوڑ کر فرار

خاتون جب مزید رشوت دینے سے انکاری ہوئی تو تفتیشی محمد حسین نے مدعیہ مقدمہ کو پرچہ خارج کرنے کی دھمکیاں دینا شروع کردیں۔ ان حالات کو دیکھتے ہوئے متاثرہ خاتون ڈی ایس پی فیروزوالہ کے پاس جاپہنچی اور ساری روداد بیان کر ڈالی۔ انکوائری کے بعد جب یہ مدعیہ مقدمہ سمیرہ کوثر اور تفتیشی آفیسر محمد حسین سب انسپکٹر ڈی ایس پی آفس سے باہر آئے تو سب انسپکٹر نے خاتون کے ساتھ غلیظ زبان استعمال کرنا شروع کی جس پر مشتعل ہوکر خاتون سب انسپکٹر کے گلے پڑگئی اور اس کی وردی سے پکڑ کر کھینچا تانی کرتی رہی اور روتے ہوئے یہ کہتی رہی کہ تم سب انسپکٹر بننے کے لائق نہیں ہو کس لئے یہ بیچ تمہارے کاندھے پر لگیں یہ پھول تمہیں زیب نہیں دیتے اور سب انسپکٹر کے کندھوں پر لگے سٹار اتار دئیے۔ اس سارے معاملے کو وہاں کھڑے ہوئے تمام افراد دیکھ کر محظوظ ہوتے رہے جبکہ پولیس کے دیگر شیر جوان یہ تماشہ بڑی خاموشی اور بے حسی سے دیکھتے رہے جس کے بعد تھانہ فیکٹری ایریا کا یہ سب انسپکٹر محمد حسین ندامت کے ساتھ پھینک کر چلتا بنا۔

خاتون کا کہنا ہے کہ میں نے اس کرپٹ سب انسپکٹر کے بیج اور ٹوپی اتارلی ہے اور یہ دونوں چیزیں میں آئی جی پنجاب کے سامنے پیش ہوکر احتجاج کے طور پر انہیں دوں گی تاکہ وہ اسے دوبارہ لگانے سے پہلے یہ تصدیق کرلیں کہ یہ کرپٹ محمد حسین سب انسپکٹر اس منصب پر فائز ہونے کے لائق بھی ہے کہ نہیں۔

مزید : لاہور