’ہم چین میں خون کے دریا بہادیں گے۔۔۔‘ چین کو اب تک کی سب سے خوفناک دھمکی دے دی گئی، یہ دھمکی کس نے دی؟ جان کر پاکستانی بھی شدید پریشان ہوجائیں گے، جس کام کا ڈر تھا وہ شروع ہوگیا

’ہم چین میں خون کے دریا بہادیں گے۔۔۔‘ چین کو اب تک کی سب سے خوفناک دھمکی دے ...
’ہم چین میں خون کے دریا بہادیں گے۔۔۔‘ چین کو اب تک کی سب سے خوفناک دھمکی دے دی گئی، یہ دھمکی کس نے دی؟ جان کر پاکستانی بھی شدید پریشان ہوجائیں گے، جس کام کا ڈر تھا وہ شروع ہوگیا

روزنامہ پاکستان کی اینڈرائیڈ موبائل ایپ ڈاؤن لوڈ کرنے کے لیے یہاں کلک کریں۔

بغداد (مانیٹرنگ ڈیسک)چین کا شمار ان عالمی طاقتوںمیں ہوتا ہے جو دیگر ممالک کے اندرونی تنازعات سے دور رہتی ہیں، اور یہی وجہ ہے کہ کبھی کسی مسلح گروہ یا شدت پسند تنظیم نے اس کے خلاف ہتھیار نہیں اٹھائے، البتہ شدت پسند تنظیم داعش کا معاملہ مختلف ہے۔ اس تنظیم کی جانب سے دنیا بھر کے ممالک کو دھمکیاں دی جاتی رہی ہیں، اور اب پہلی بار اس نے چین میں خون کی ندیاں بہانے کی دھمکی بھی دے ڈالی ہے۔

’میں دہشتگردی کی کارروائی کرنے والا تھا لیکن پھر خیال آیا کہ۔۔۔‘ شدت پسند جماعت چھوڑنے والے نوجوان نے ایسی بات کہہ دی کہ سن کر ہر کوئی سوچ میں پڑ جائے

ایران فرنٹ پیج نیوز کی رپورٹ کے مطابق پیر کے روز داعش کی عراقی شاخ کی جانب سے نصف گھنٹے کی ایک ویڈیو جاری کی گئی ہے جس میں ایک شخص کو ایک ننھے بچے کی موجودگی میں قتل کئے جانے کے مناظر ہیں، جبکہ مبینہ طور پر مشرق وسطیٰ میں مقیم چینی نژاد شدت پسندوں کے حالات زندگی بھی دکھائے گئے ہیں۔ ویڈیو میں کمسن لڑکے مارشل آرٹ کی مشق کرتے اور بندوقوں کو کھولتے اور جوڑتے دکھائی دیتے ہیں، اور لڑکوں کا ایک گروپ مبلغین کا واعظ سنتا دکھائی دیتا ہے، جو چینی صوبے سنکیانگ سے تعلق رکھنے والے یغور مسلمان دکھائے گئے ہیں۔ اسی ویڈیو میں ایک بظاہر یغور جنگجو ایک مبینہ مخبر کو قتل کرنے سے پہلے چین کے خلاف دھمکی آمیر بیان دیتے ہوئے کہتا ہے ”اے چین والو، تم نہیں سمجھتے کہ لوگ کیا کہہ رہے ہیں۔ ہم خلافت کے سپاہی ہیں، ہم تمہارے پاس آئیں گے، اپنے ہتھیاروں کی زبان سے تمھیں سمجھانے کے لئے، اور خون کی ندیاں بہانے کے لئے۔“ اس ویڈیو کا تجزیہ کرنے والے ادارے ایس آئی ٹی ای انٹیلی جنس گروپ کا کہنا ہے کہ یہ غالباً مغربی عراق کے کسی علاقے میں بنائی گئی ہے۔

مزید : بین الاقوامی