دنیا کے سرد ترین براعظم انٹار کٹیکا کا درجہ حرارت گزشتہ روز پاکستانی شہر کے برابر پہنچ گیا تھا،ماہرین کا انکشاف

دنیا کے سرد ترین براعظم انٹار کٹیکا کا درجہ حرارت گزشتہ روز پاکستانی شہر کے ...
دنیا کے سرد ترین براعظم انٹار کٹیکا کا درجہ حرارت گزشتہ روز پاکستانی شہر کے برابر پہنچ گیا تھا،ماہرین کا انکشاف

روزنامہ پاکستان کی اینڈرائیڈ موبائل ایپ ڈاؤن لوڈ کرنے کے لیے یہاں کلک کریں۔

بیونس آئرس(آئی این پی) دنیا کے سرد ترین براعظم یعنی انٹار کٹیکا کا درجہ حرارت گزشتہ روز پاکستانی شہر کے برابر پہنچ گیا تھا۔جی ہاں واقعی اگر تو آپ انتظار کٹیکا میں ہو تو وہاں آپ کو گرم کپڑے پہننے کی بجائے ٹی شرٹس یا ہلکے پھلکے کپڑے پہننے کی ضرورت ہوگی جبکہ ہوائی چپلیں بھی کچھ راحت فراہم کریں گی کیونکہ اس براعظم کا درجہ حرارت 17.5 ڈگری سینٹی تک پہنچ گیا ہے۔اگر کچھ زیادہ محسوس نہیں ہورہا تو یہ درجہ حرارت درحقیقت گزشتہ روز کراچی کا کم از کم درجہ حرارت تھا بلکہ پاکستانی شہر کا صرف 17 جبکہ انٹار کٹیکا 17.5 سینٹی گریڈ تھا۔یہ انٹار کٹیکا کا ریکارڈ درجہ حرارت تھا جو کہ ارجنٹائن کی ریسرچ بیس نے ریکارڈ کیا جو اس براعظم کے شمالی حصے میں واقع ہے۔اس سے قبل اس جنوبی براعظم میں سب سے زیادہ درجہ حرارت تیس جنوری 1982 کو ریکارڈ کیا گیا تھا جو کہ 19.7 سینٹی گریڈ تھا۔اور یہ وہ براعظم ہے جہاں دنیا کا سب سے کم درجہ حرارت بھی ریکارڈ کیا گیا ہے جو کہ 1983 میں وسطی انٹار کٹیکا میں منفی 128.6 ڈگری سینٹی گریڈ تھا۔واضح رہے کہ عام طور پر انٹار کٹیکا کا درجہ حرارت اوسطا منفی دس سے منفی 60 ڈگری سینٹی گریڈ ہوتا ہے۔

مزید : ماحولیات