سرکاری اہلکاروں کو ریونیو اور فائل ٹریکنگ سسٹم کی تربیت دی جائے ،ڈی سی سوات

سرکاری اہلکاروں کو ریونیو اور فائل ٹریکنگ سسٹم کی تربیت دی جائے ،ڈی سی سوات

پشاور( سٹاف رپورٹر)سرکاری مشینری کو مزید تیز تر اور بہترین خطوط پر استوار کرنے کے لئے تمام اضلاع کے سرکاری اہلکاروں کو ریوینیو ٹریکنگ سسٹم اور فائل ٹریکنگ سسٹم پر ٹریننگ دی جائے۔ محمد سلیم خان چیف سیکرٹری خیبر پختونخوا محمد سلیم خان کی ہدایت پر تمام اضلاع میں ٹریننگ کا سلسلہ شروع ہے اسی حوالے سے ڈپٹی کمشنر سوات کے دفتر میں پی ایم آر یو چیف سیکرٹری خیبر پختونخوا آفس کے زیر اہتمام فائل ٹریکنگ سسٹم اور ریوینیو کیس ڈسپوزل سسٹم پر ایک روزہ تربیتی ورکشاپ منعقد ہوا جس میں ایڈیشنل ڈپٹی کمشنر سوات فواد خان، ایڈیشنل ڈپٹی کمشنر شانگلہ مقبول حسین اور ضلع سوات، بونیر اور شانگلہ کی تحصیلوں کے ریونیو سٹاف، ریڈرز، سٹینوگرافر ز اور کمپیوٹر اپریٹر ز نے شرکت کی۔تربیتی ٹیم میں ڈپٹی کوارڈینیٹرکیپٹن(ر) زبیر احمد نیازی، ڈپٹی کوارڈینیٹر ڈاکٹر عاکف خان، محمد اسلام مہمند انفارمیشن افیسر، سرور خان ویب ڈیو لیر اور ایم ائی ایس منیجر وقار اکبر شامل تھے۔کیپٹن (ر) زبیر نیازی اور ڈاکٹر عاکف خان نے کیا کہ ریونیو کیس مینجمنٹ سسٹم کے لیے وضع کردہ سافٹ ویئر میں اسسٹنٹ کمشنرز، ایس ایم بی آر اور پی ایم آر یو کے لیے اپنے اپنے اپشنز موجود ہیں جن میں کیسوں کی تعداد، فیصلہ شدہ کیسوں کی تعداد اور زیر التواء کیسوں کی تعداد موجود ہوگی۔اس موقع پر کوارڈینیٹر شاہد محمود نے ان کو پی ایم ار یو میں جاری سرگرمیوں کے حوالے سے بریفنگ دی جس پر چیف سیکرٹری خیبرپختونخوا محمدسلم خان نے ہدایات جاری کیں کہ فائل ٹریکنگ سسٹم کو تمام اضلاع میں لاگو کیا جائے اور اس پر کام شروع کرکے رپورٹ چیف سیکرٹری کو پیش کی جائے۔اس موقع پر کیپٹن (ر) زبیر احمد نیازی نے کہا کہ صوبے کے 10 اضلاع میں یہ آ ن لائن سسٹم نافذ ہے جبکہ بقیہ اضلاع میں یہ سسٹم تجربہ کار ریونیو افسران کے مشوروں کی روشنی میں وضع کیا گیا ہے اور اس کو زیادہ سے زیادہ آسان اور سادہ بنانے کی کوشش کی گئی ہے۔ انہوں نے ریوینو عملہ اور انتظامی افسران کو ہدایت کی کہ وہ یہ سسٹم بھرپور توجہ کے ساتھ سیکھیں کیونکہ یہ سسٹم ہر صورت میں نافذ ہوکر رہے گا۔اس موقع پر ٹریننگ کے شرکاء نے مفید سوالات کئے اور مناسب تجاویز بھی دیں۔پی ایم آر یو افسران نے فیلڈ افسران کی جانب سے سافٹ وئیر اور ان لائن سسٹم میں مفید تجاویز کا خیر مقدم کرتے ہوئے انہیں سسٹم میں شامل کرنے کا یقین دلایا۔مزید براں پی ایم ار یو کے ایف ٹی ایس ایکسپرٹ سرور خان نے اضلاع کے فوکل پرسنز کو فائل ٹریکنگ سسٹم کے حوالے سے کہا کہ سرکاری دفاتر میں فائلز کو فائل ٹریکنگ سسٹم پر لانا ضروری ہے جس سے افسران اور عام عوام بھی مستفید ہونگے۔انہوں نے کہا کہ اس حوالے سے تمام فائلوں کی جانچ پڑتال کی جارہی ہے۔ انہوں نے کہا کہ شہری اب ایف ٹی ایس کے ذریعے اپنے فائل کو ٹریک کرسکیں گے کہ اس وقت ان کا فائل کس محکمے میں ہے اس ضمن میں وزیراعلیٰ خیبرپختونخوا محمود خان نے گزشتہ ماہ پی ایم ار یو کے دورے کے موقع پر خواہش ظاہر کی تھی کہ فائل ٹریکنگ سسٹم کا دائرہ کار قبائلی اضلاع تک بڑھایا جائے تاکہ وہاں کے لوگ بھی اس سسٹم سے مستفید ہوں اور وہ لوگ بھی اپنا کیس باآسانی آن لائن ٹریک کر سکیں۔

مزید : پشاورصفحہ آخر