پٹرولیم مصنوعات کے نرخوں میں اضافہ سے مہنگائی کا طوفان آئیگا ، گھریلو خواتین کا ردعمل

پٹرولیم مصنوعات کے نرخوں میں اضافہ سے مہنگائی کا طوفان آئیگا ، گھریلو خواتین ...

لاہور(لیڈی رپورٹر) ملک کی سیاسی و مذہبی جماعتوں کی خواتین اور گھریلو خواتین نے حکومت کی جانب سے پٹرول کی قیمتوں میں اضافے پر اپنے اپنے ردعمل کااظہار کرتے ہوئے کہا ہے کہ پہلے ہی ملک میں مہنگائی کا ایک بازار گرم ہے اور ضروریات زندگی کی اشیاء پہلے ہی عوام کی پہنچ سے دور ہو چکی ہیں اور عوام کی قوت خرید بھی ختم ہو چکی ہے اب پٹرول کی قیمتوں میں اضافے سے مزید مہنگائی بڑھے گی جس کی وجہ سے گھروں کے چولہے ٹھنڈے پڑنے کے اندیشے ہیں حکومت بالخصوص وزیر خزانہ اسد عمر اپنے اپوزیشن کے وقت کئے گئے اعلان کے مطابق پٹرول کی فی لیٹر قیمت پر حکومت کی طرف سے لگائے گئے پچاس روپے ٹیکس کو واپس لے تاکہ اس کا فائدہ عوام کو پہنچ سکے ،اس امر کااظہار پیپلز پارٹی کی خواتین رہنماؤں ثمینہ خالد گھرکی‘ نرگس خان ‘ سونیا خان ‘ مسلم لیگ (ن) کی شائستہ پرویز ملک ‘ نبیلہ یاسمین ‘ بی بی وڈیری‘ جماعت اسلامی کی سمعیہ راحیل قاضی اور گھریلو خواتین مسز شاہد ‘ مسز عمر ‘ مسز سلمان ‘ مسز شازیہ اور مسز نوید نے ’’پاکستان‘‘ سے گفتگو کرتے ہوئے کیا ۔انہوں نے کہا کہ پہلے ہی ملک میں ہر طرف مہنگائی کا طوفان ہے عوام پر حکومت نے پٹرول بم گراکر کوئی اچھا کام نہیں کیا ضرورت تواس بات کی تھی کہ پٹرول کی قیمتوں میں کمی کی جاتی لیکن الٹا حکومت نے اس کی قیمتوں میں اضافہ کرکے عوام پر بہت بڑا ظلم کیا ہے حکومت کے اس اقدام کی ہر مکتبہ فکر نے شدید الفاظ میں مذمت کی ہے ۔ان کا کہنا تھا کہ حکومت فوری طور پر پٹرول کی قیمتوں میں اضافے کو واپس لے اور عوام کو ریلیف دینے کے لئے کم سے کم پٹرول کی فی لیٹر قیمت میں پچاس روپے تک کی کمی کرے اسی سے حکومت کی طرف سے عوام کو ریلیف ملے گا ۔انہوں نے کہا کہ حکومت مہنگائی میں کمی لانے کے لئے عملی اقدامات کرے اور ناجائز منافع خوروں کو پکڑ نے کے لئے اپنی پرائس کنٹرول کمیٹیوں کو متحرک اور فعال کرے اور جو بھی ناجائز منافع خوری کرتے ہوئے پکڑا جائے اس کے خلاف سخت سے سخت کاروائی عمل میں لائی جائے ۔

مزید : میٹروپولیٹن 1