مہنگائی شرح میں 10-63فیصد اضافہ ‘8اشیاء کی قیمتیں کنٹرول سے باہر

مہنگائی شرح میں 10-63فیصد اضافہ ‘8اشیاء کی قیمتیں کنٹرول سے باہر

ملتان (نیوز رپورٹر) ادارہ شماریات پاکستان نے اشیائے خورونوش و ضروریہ کی قیمتوں میں اضافہ و کمی کی ہفتہ وار رپورٹ جاری کردی ہے جس کے مطابق اختتام پذیر ہفتہ کے دوران مہنگائی کی شرح میں63۔ 10۔ فیصد ریکارڈ اضافہ ہوا ہے ملک کے 17 بڑے شہروں سے 53 اشیاء کے تقابلی جائزہ کے مطابق 8 اشیاء4 کی قیمتوں میں اضافہ اور 9 اشیاء کی قیمتوں میں کمی واقع ہوئی ہے جبکہ 36 اشیاء کی(بقیہ نمبر29صفحہ12پر )

قیمتوں میں استحکام رہا ہے رپورٹ کے مطابق لہسن۔ برائیلر مرغی۔ کیلا۔ پیاز۔ چاول اری 6۔ گڑ۔ دال مونگ اور چینی کی قیمتوں میں اضافہ ہوا ہے اور آلو۔ ٹماٹر۔ ایل پی جی سلنڈر۔ چاول باسمتی۔ دال ماش۔ دال چنا۔ فارمی انڈے۔ آٹا اور دال مسور کی قیمتوں میں کمی واقع ہوئی ہے جبکہ گندم۔ ڈبل روٹی۔ چھوٹا گوشت۔ تازہ دودھ۔ دہی۔ خشک دودھ۔ سرسوں کا تیل۔ کوکنگ آئل ٹن۔ ویجیٹیبل گھی ٹن۔ ویجیٹیبل گھی کھلا۔ نمک۔ سرخ مرچ پسی۔ چائے کی پتی۔ بڑے گوشت کی پلیٹ۔ دال کی پلیٹ۔ چائے کا کپ۔ سگریٹ۔ لان پرنٹڈ۔ شرٹنگ۔ مردانہ و زنانہ سینڈلز۔ الیکٹرک چارجز۔ گیس چارجز۔ مٹی کا تیل۔ جلانے والی لکڑی۔ الیکٹرک بلب۔ انرجی سیور۔ واشنگ سوپ۔ ماچس۔ پٹرول سپر۔ ہائی سپیڈ ڈیزل۔ لوکل کال اور صابن کی قیمتوں میں استحکام رہا ہے۔۔۔

مزید : ملتان صفحہ آخر