40 سال تک ہر سال شادی کی پیشکش اور لڑکی مسلسل انکار کرتی رہی، 74 سال کی عمرمیں شادی کرنے والے جوڑے کی سب سے انوکھی کہانی

40 سال تک ہر سال شادی کی پیشکش اور لڑکی مسلسل انکار کرتی رہی، 74 سال کی عمرمیں ...
40 سال تک ہر سال شادی کی پیشکش اور لڑکی مسلسل انکار کرتی رہی، 74 سال کی عمرمیں شادی کرنے والے جوڑے کی سب سے انوکھی کہانی

  


لندن(مانیٹرنگ ڈیسک) کسی لڑکے کا لڑکی کو شادی کی پیشکش کرنا اور لڑکی کا مسترد کر دینا کوئی خلاف معمول واقعہ نہیں ہے تاہم کوئی شخص کتنی دیر تک ثابت قدمی سے ایک ہی لڑکی کو شادی کی پیشکش کرسکتا ہے؟ ایک سال، دو سال، دس سال؟؟آپ یہ سن کر دنگ رہ جائیں گے کہ برطانیہ میں ایک شخص 43سال تک خاتون کو شادی کی پیشکش کرتا رہا جو اتنے عرصے بعد بالآخر اب جا کر قبول ہوئی ہے۔ میل آن لائن کے مطابق 74سالہ کولن جونز اور 72سالہ پاﺅلین یانگ 1976ءمیں پہلی بار ملے تھے۔ وہ اس وقت بال بچے دار تھے تاہم دونوں کی اپنے اپنے سابق پارٹنرز کے ساتھ علیحدگی ہو چکی تھی۔ دونوں کے بچے ایک ہی گراﺅنڈ میں کھیلنے جاتے تھے جہاں ان کی ملاقات ہوئی اور دونوں کو ایک دوسرے سے محبت ہو گئی۔

رپورٹ کے مطابق تب سے کولن اور پاﺅلین ایک ساتھ رہ رہے ہیں۔ اس عرصے میں کولن اور پاﺅلین نے پہلے برطانوی علاقے ویلز میں اکٹھے کاروبار کیا اور پھر مالٹا میں بی اینڈ بی کے نام سے ہوٹلنگ کا بزنس شروع کیا جو بہت مقبول ہوا اور اب متعدد ممالک میں اس کی برانچیں موجود ہیں۔ ان تمام سالوں میں کولن ہر سال پاﺅلین کو شادی کی پیشکش کرتا اور وہ ہر سال انکار کر دیتی۔ 43سال بعد بالآخر کولن کی بجائے خود پاﺅلین نے شادی کی پیشکش کی اور ظاہر ہے کولن کیسے انکار کر سکتا تھا۔ یوں گزشتہ دنوں ان دونوں نے شادی کر لی۔

اس وقت پاﺅلین اعصابی نظام کی بیماری ’کورٹیکوباسل ڈی جنریشن‘ کا شکار ہے اور وہیل چیئر کی ہو کر رہ گئی ہے۔ شادی کے لیے کولن خود اس کو وہیل چیئر پر لے کر آیا اور تقریب کے بعد خود اسے لے کر گیا۔شادی کے بعد کولن نے ماضی کو یاد کرتے ہوئے بتایا کہ ”ہمیں ایک دوسرے کو دیکھتے ہی پیار ہو گیا تھا۔ تب سے ہم نے ایک ایک لمحہ اکٹھے گزارا ہے تاہم پاﺅلین نے آج تک میری شادی کی درخواست قبول نہیں کی اور اس سال خود ہی مجھے پرپوز کر ڈالا، جس پر مجھے کچھ حیرت بھی ہوئی اور میں نے فوراً ہاں کہہ دی۔“

مزید : ڈیلی بائیٹس