تحقیق کو فروغ دیکر ینگ ڈاکٹرز کی صلاحیتوں کو نکھارا جا سکتا ہے،الفرید ظفر

  تحقیق کو فروغ دیکر ینگ ڈاکٹرز کی صلاحیتوں کو نکھارا جا سکتا ہے،الفرید ظفر

  



لاہور(سٹی رپورٹر)پرنسپل امیر الدین میڈیکل کالج و لاہور جنرل ہسپتال پروفیسر ڈاکٹر محمد الفرید ظفر نے کہا کہ میڈیکل کے شعبے میں نوجوان ڈاکٹروں کی صلاحیتوں کو نکھارنے کے لئے تحقیق اورپیش رفت سے آگاہی انتہائی ضروری ہے جس کے لئے سائینٹفک سمپوزیم اہمیت کے حامل ہیں اس سے عالمی سطح پر ہونے والی ریسرچ سے اپنے ملک میں بہرہ مند ہونے کے ساتھ ڈاکٹرز کے علاوہ دیگر طبی عملے کو بھی خاطر خواہ فائدہ پہنچتا ہے۔ پی جی ایم آئی کے سمپوزیم اور میڈیکل ایجوکیشن کانفرنس سے پاکستانی بالخصوص نوجوان ڈاکٹروں کی میڈیکل تربیت میں خاطر خواہ بہتری آئے گی اور وہ زیادہ پیشہ وارانہ مہارت کے ساتھ مریضوں کی خدمت کر سکیں گے۔وہ پی جی ایم آئی کے زیر اہتمام ہونے والے سائینٹفک سمپوزیم و میڈیکل کانفرنس کے اختتامی سیشن سے خطاب کر رہے تھے۔ اس موقع پر وائس چانسلر کنگ ایڈورڈ میڈیکل یونیورسٹی پروفیسر ڈاکٹر خالد مسعود گوندل،چیئر پرسن ہیلتھ کیئر کمیشن پروفیسر عطیہ مبارک، ایگزیکٹو ڈائریکٹر پی آئی این ایس پروفیسر خالد محمود، چیف ایگزیکٹو پی آئی سی پروفیسر ثاقب شفیع اورانسٹی ٹیوٹ کے سابق پرنسپلز پروفیسر انجم حبیب وہرہ،پروفیسر طارق صلاح الدین،ایم ایس ڈاکٹر محمود صلاح الدین سمیت سینئر اساتذہ، پروفیسرز، ڈاکٹرز اور میڈیکل سٹوڈنٹس کی بڑی تعداد موجود تھی۔اختتامی سیشن کے چیف آرگنائزر پروفیسر آغا شبیر علی نے بتایا کہ اس سائینٹفک سمپوزیم میں 30ورکشاپس اور 50 ریسرچ پیپرز کے علاوہ سٹیٹ آف دی آرٹ لیکچرز ہوئے جس سے میڈیکل سٹوڈنٹس کی بڑی تعداد مستفید ہوئی۔وی سی کے ای یونیورسٹی پروفیسر خالد مسعود گوندل،پروفیسر عطیہ مبارک، پروفیسر انجم حبیب وہرہ اور پروفیسر خالد محمود و دیگر اساتذہ نے اظہار خیال کرتے ہوئے کہا کہ میڈیکل کے شعبے میں طبی تعلیم و تحقیق اور جدید علوم مسلسل جاری رہنے والا عمل ہے، ڈاکٹر کو مریض سے اپنے تعلق کو مضبوط بنانے کے لئے اُس کی زیادہ سے زیادہ پیشہ وارنہ مدد کرنی ہوتی ہے۔

مزید : میٹروپولیٹن 1