جڑی بوٹیوں کو چارے کے طورپر ہرگزاستعمال نہ کرنے کی ہدایت

  جڑی بوٹیوں کو چارے کے طورپر ہرگزاستعمال نہ کرنے کی ہدایت

  



قصور (یواین پی)محکمہ زراعت کے ترجمان نے سپرے کے بعد جڑی بوٹیوں کو چارے کے طورپر ہرگزاستعمال نہ کرنے کی ہدایت کی ہے اور کہاہے کہ کاشتکار زہریلی ادویات کے سپرے کے بعد جڑی بوٹیوں کو چارے کے طورپر مویشیوں‘ جانوروں بالخصوص بکریوں‘ گائے‘ بھینسوں وغیرہ کو ڈالنے سے گریز کریں۔کیونکہ سپرے کے زہریلے اثرات جہاں جڑی بوٹیوں کے ذریعے مذکورہ جانوروں کے پیٹ میں داخل ہوکربیماریاں پھیلا سکتا ہے۔دودھ اور گوشت کی پیداوار کو بُری طرح متاثر کرسکتے ہیں وہیں جانوروں اور مویشیوں کی زندگیوں کو بھی خطرات سے دوچارہوناپڑسکتاہے‘زہرکے چھڑکاؤ کے بعد گوڈی یا بارہیروکے استعمال سے بھی گریزکیاجائے۔تاکہ زہروں کا موثر اثر دیرتک برقراررکھنے میں مددمل سکے بتایا کہ موجودہ حالات میں گندم سمیت دیگر زرعی اجناس کی بہتر پیداوارکا حصول اشدضروری ہے‘ سپرے کے دوران انتہائی احتیاط سے کام لیناچاہئیے اور اس دوران کوئی جگہ خالی نہیں رہنے دی جانی چاہئیے گندم کے کھیت کے خالی کناروں پر بھی اگر سپرے کردیاجائے تو اس کے بھی بہترین اثرات حاصل ہوسکتے ہیں ریتلے اور کلراٹھے علاقوں میں ماہرین زراعت یامحکمہ زراعت کے فیلڈ سٹاف کی مشاورت سے زہروں کا سپرے کرنے کی بھی ہدایت کی ہے۔

مزید : کامرس