رستم‘ 4 افراد کا کمسن بچے پر تشدد‘ ہاتھ توڑ ڈالا

    رستم‘ 4 افراد کا کمسن بچے پر تشدد‘ ہاتھ توڑ ڈالا

  



رستم(تحصیل رپورٹر) پلوڈھیری ننگ آباد میں چار افراد نے گیارہ سالہ بچے پر تشدد کرکے ہاتھ توڑ ڈالا،تھانہ چورہ پولیس پر عدم اطمینان کا اظہار،متاثرین نے ڈی پی او مردان سے فوری انصاف کا مطالبہ کیا ہے۔تحصیل رستم پلوڈھیری ننگ آباد کے رہائشی اسحاق خان،بختیا ر اور ارسلا خان نے درجنوں ساتھیوں کے ہمراہ رستم پریس کلب میں پریس کانفرنس کے دوران بتایا کہ گزشتہ ہفتے محلے کے بچے کھیل کھود میں مصروف تھے کہ اس دوران وحید اللہ،حضرت سلطان،عالمزیب اور قاسم نے بغیر کسی وجہ پر گیارہ سالہ شہاب علی کوشدید مار اپیٹا جس سے اس کا ہاتھ مکمل طور پر ٹوٹ چکا ہے بچے کی والدہ نے تھانہ چورہ میں رپورٹ درج کرادی لیکن تھانہ چورہ پولیس تا حال ملزمان کو گرفتار نہیں کر سکی الٹا ہم سے 107لیا گیا انہوں نے وزیر اعلی محمود خان،آئی جی پی اور ڈی پی او مردان سمیت چائلڈ پروٹیکشن پر کام کرنے والے این جی اوز سے فوری انصاف کی فراہمی اور مبینہ ملزمان کو جلد از جلد گرفتار کرکے کیفر کردار تک پہنچانے کی اپیل کی۔

مزید : پشاورصفحہ آخر