26 سالہ نوجوان کی گھر میں بنائی ایک ایجاد نے چند مہینوں میں اُسے کروڑ پتی بنا دیا

26 سالہ نوجوان کی گھر میں بنائی ایک ایجاد نے چند مہینوں میں اُسے کروڑ پتی بنا ...
26 سالہ نوجوان کی گھر میں بنائی ایک ایجاد نے چند مہینوں میں اُسے کروڑ پتی بنا دیا

  



کنبرا(مانیٹرنگ ڈیسک) آسٹریلیا میں ایک 26سالہ نوجوان نے ایک ایسی مشین ایجاد کی کہ دنیا بھر میں ہاتھوں ہاتھ فروخت ہونے لگی اور صرف دو سال میں اس مشین کی فروخت سے اس نے 2کروڑ ڈالر (تقریباً 3ارب 9کروڑ روپے) کما لیے ہیں۔ میل آن لائن کے مطابق اس نوجوان کا نام ڈائیلن مولن ہے جو آسٹریلوی شہر سڈنی کا رہائشی ہے۔ اس نے دو سال قبل لیزر ہیئر رویموئل ڈیوائس تیار کی تھی۔ لوگ اس سے پہلے بلیڈ، کریم اور پاﺅڈر جیسے روایتی طریقوں سے بال صاف کرتے تھے چنانچہ یہ نئی چیز آنے پر لوگوں نے اسے ہاتھوں ہاتھ لیا۔

ڈائیلن مولن نے ’ہیپی سکن ‘ کے نام سے ایک کمپنی بنائی اور یہ مشین فروخت کرنی شروع کر دی۔ اس کی قیمت اس نے 299ڈالر رکھی۔ پہلے سال میں اس نے 1کروڑ 20لاکھ ڈالر کمائے۔ رپورٹ کے مطابق لیزر کے ذریعے بالوں کے خاتمے کی ٹیکنالوجی تو پہلے سے موجود تھی تاہم وہ تمام ڈیوائسز پروفیشنل تھیں اور بہت تیزی سے بالوں کا خاتمہ کرتی تھیں، چنانچہ ان کے جلد پر مضر اثرات بھی مرتب ہوتے تھے۔

ڈائیلن کی بنائی یہ ڈیوائس 12سیشنز کے بعد اثر دکھانا شروع کرتی ہے اور 5ہفتوں کے استعمال پر جسم کے غیرضروری بالوں کا مکمل خاتمہ ہو جاتا ہے اور اس کے جلد پر کوئی مضر اثرات بھی نہیں ہوتے۔ڈائیلن کا کہنا تھا کہ ”ایک طرف پروفیشنلز سے لیزر سیشن کروانا جلد کے لیے نقصان دہ ہوتا ہے اور دوسرے ان کے سیشنز بہت مہنگے بھی ہوتے ہیں اور ہر کوئی ان کی فیس ادا کرنے کی سکت نہیں رکھتا۔ یہیں سے مجھے ایسی ڈیوائس بنانے کا خیال آیا جو سستی بھی ہو اور جلد کے لیے بھی کم نقصان دہ ہو۔“

مزید : ڈیلی بائیٹس