دھاندلی بہت مہنگی پڑ گئی ، الیکشن کمیشن نے غائب ہونے والے پریزائیڈنگ افسران کا کال ریکارڈ طلب کر لیا ، حکومتی نظام لرزنے لگ گیا 

دھاندلی بہت مہنگی پڑ گئی ، الیکشن کمیشن نے غائب ہونے والے پریزائیڈنگ افسران ...
دھاندلی بہت مہنگی پڑ گئی ، الیکشن کمیشن نے غائب ہونے والے پریزائیڈنگ افسران کا کال ریکارڈ طلب کر لیا ، حکومتی نظام لرزنے لگ گیا 

  

اسلام آباد (ڈیلی پاکستان آن لائن )الیکشن کمیشن نے این اے 75 کے ضمنی انتخاب کی پولنگ کے بعد ووٹوں سمیت غائب ہونے والے 20 پریزائیڈنگ افسران کے موبائل کا ڈیٹا ’ پاکستان ٹیلی کمیونیکیشن اتھارٹی ‘ (پی ڈی اے ) سے مانگ لیا ہے ۔

انگیریزی اخبار دی نیوز کی رپورٹ کو سینئر صحافی عمر چیمہ کی جانب سے ٹویٹر پر شیئر کیا گیاہے جس میں دعویٰ کیا گیا ہے کہ الیکشن کمیشن نے پی ٹی اے سے رابطہ کرتے ہوئے 20 پریزائیڈنگ افسران کے فون کا ڈیٹا طلب کر لیاہے لیکن دلچسپ امر یہ ہے کہ پاکستان ٹیلی کمیونیکیشن اتھارٹی نے الیکشن کمیشن کی درخواست موصول ہونے کے بعد حکومت سے رابطہ کیا تاکہ یہ فیصلہ کیا جا سکے کہ الیکشن کمیشن کو متعلقہ معلومات فراہم کرنی ہیں یا نہیں ۔

رپورٹ میں دعویٰ کیا گیاہے کہ موبائل فون کا ڈیٹا حاصل ہونے سے نہ صرف بیس پریزائیڈنگ افسرا کے غائب ہونے کے دوران ان کی نقل و حمل کا پتا لگایا جا سکے گا بلکہ یہ بھی معلوم ہو جائے گا کہ یہ تمام لوگ کن افراد سے رابطے میں تھے ۔حکومت کے اعلیٰ ذرائع کا کہناتھا کہ اگر مطلوبہ ڈیٹا الیکشن کمیشن کو فراہم کر دیا جاتاہے اس سے دھاندلی کی منصوبہ بندی بے نقاب ہونے کا قوی امکان ہے جبکہ یہ بھی سامنے آ جائے گا کہ ان پریزائیڈنگ افسرا ن کی لگامیں کن کے ہاتھ میں تھیں ۔

(ن) لیگ نے ان پریزائیڈنگ افسران پر مقامی فارم ہاو¿س میں جمع ہو کر نتائج تبدیل کرنے کا الزام عائد کیا ہے۔الیکشن کمیشن پہلے ہی فیصلہ کر چکا ہے کہ ان 20 پریزائیڈنگ افسران کے ٹرائل کا معاملہ سیشن کورٹ بھیجا جائے جب کہ الیکشن کمیشن نے یہ الیکشن کالعدم قرار دے دیا ہے۔

سینئر صحافی عمر چیمہ نے رپورٹ ٹویٹر پر شیئر کرتے ہوئے ساتھ اپنا تجزیہ بھی کیا اور کہا کہ ” واضح رہے کہ اس دن تمام ادارے غیر جانبدار  تھے ۔“

مزید :

اہم خبریں -قومی -