حوالگی کیس، بچے باپ سے  لے کر ماں کے حوالے کردیئے 

 حوالگی کیس، بچے باپ سے  لے کر ماں کے حوالے کردیئے 

  

لاہور(نامہ نگارخصوصی)لاہور ہائی کورٹ کے مسٹرجسٹس طارق ندیم نے بچے حوالگی کیس میں دو بچے باپ کی تحویل سے لے کر ماں کے حوالے کردیئے، عدالتی حکم کے بعد بچوں نے ماں کے ساتھ جانے سے انکار کردیا اور باپ کے ساتھ جانے کے لئے چیخ و پکار کرتے رہے لیکن ماں زبردستی بچوں کواپنے ساتھ لے کرروانہ ہوگئی،درخواست گزار خاتون ند ابی بی انے مو قف اختیار کررکھاتھا کہ محمداکمل علی سے شادی کے بعد دو بیٹے پیدا ہوئے خاوند گھر چلانے کے لئے خرچہ نہیں دیتا تھا،گھریلو ناچاقیوں اور خرچہ نہ ملنے سے تنگ آکر خاوند سے طلاق لے لی جبکہ خاوند نے دوبیٹوں عبداللہ اور صیام کو اپنے پاس رکھا ہوا ہے اور ملنے کی اجازت بھی نہیں دیتا،عدالت سے استدعا ہے کہ بچوں کو باپ کی تحویل سے لے کر ماں کے حوالے کرنے کا حکم دیاجائے عدالتی حکم پر پولیس نے بچوں اور اس کے والد کو عدالت میں پیش کیا بچوں کے والد محمد اکمل نے عدالت کوبتایا کہ خاتون خود ہی گھر اور دونوں بیٹے چھوڑ کر چلی گئی،میری سابقہ بیوی طلاق یافتہ ہے اور بچوں کی بہتر تربیت نہیں کرسکے گی جبکہ بچے بھی ماں کے پاس نہیں رہنا چاہتے،بچے میرے پاس ہی رہنے کی اجازت دی جائے۔

حوالگی کیس

مزید :

صفحہ آخر -