تشدد سے پا ک معاشرہ وقت کی اہم ضرورت، عبدالخبیر آزاد 

 تشدد سے پا ک معاشرہ وقت کی اہم ضرورت، عبدالخبیر آزاد 

  

خانیوا ل (نامہ نگار+نمائندہ پاکستان+بیورو نیوز)ضلعی انتظامیہ خانیوال کے زیراہتمام ضلع کونسل ہال میں منبرومحراب و پیغام پاکستان کانفرنس کا انعقاد کیا گیا کانفرنس کی صدارت(بقیہ نمبر4صفحہ10پر)

 چیئرمین مرکزی رؤیت ہلال کمیٹی پاکستان سفیرامن مولانا سید محمد عبدالخبیر آزاد خطیب وامام بادشاہی مسجد لاہور،چیئرمین مجلس علماء پاکستان نے کی، اس کانفرنس کے مہمانان خصوصی ڈپٹی کمشنر خانیوال سلمان خان لودھی تھے-جبکہ کانفرنس میں تمام مکاتب فکر کے جید علماء کرام و مشائخ عظام،سیا سی و سماجی شخصیات،انجمن تاجران،وکلاء اور ممبران امن کمیٹی اور میڈیا نمائندگان نے شرکت کی،کانفرنس سے سفیرامن مولانا سید محمد عبدالخبیر آزاد نے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ اسلام دین امن ہے جو ہمیں احترام انسانیت کا درس دیتا ہے،پاکستان میں قیام امن کے لیے پیغامِ پاکستان کا فروغ وقت کی اہم ضرورت ہے،علماء کرام منبر ومحراب کے ذریعہ قومی یکجہتی، مذہبی ہم آہنگی، رواداری اورتشدد سے پاک معاشرہ بنانے میں اپنا بھرپورکردار ادا کریں اورپیغامِ پاکستان کے پیغام کو عام کریں، آج پیغامِ پاکستان ہرگھر کی آواز بن چکا ہے،پیغامِ پاکستان،پاکستان کا وہ عظیم بیانیہ ہے جس نے دہشت گردی اور انتہا پسندی کی کمرتوڑ دی ہے اورفرقہ واریت کے خاتمے کے لیے اہم کردار ادا کیا ہے آج اس بیانیہ کو پوری دنیا میں سہرایا جا رہا ہے،مولانا عبدالخبیر آزاد نے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ مزیدکہا کہ پاکستان کی سلامتی و استحکام کیلئے کسی قربانی سے دریغ نہیں کریں گے،ہماری ہمدردیاں اورمکمل تعاون افواج پاکستان اور قومی سلامتی کے تمام اداروں کے ساتھ ہے،ہم ملکی سلامتی و تحفظ کیلئے افواج پاکستان اور تمام سیکورٹی اداروں کے ساتھ کھڑے ہیں،ملک پاکستان کو اس وقت اتحاد،امن و یکجہتی کی اشد ضرورت ہے،مولانا آزاد نے کہا کہ پیغام پاکستان کی کامیابی ملکی سلامتی،اتحاد و یکجہتی کیلئے تمام علماء کرام و مشائخ عظام ایک پلیٹ فارم پر جمع ہیں انہوں نے  کہا کہ دشمن طاقتوں کی تمام سازشوں کو ملکر ناکام بنائیں گے،سانحہ سیالکوٹ، پشاور، تلنمبہ جیسے واقعات کی ہم شدید مذمت کرتے ہیں -ڈپٹی کمشنر سلمان خان لودھی نے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ پاکستان اللہ تعالیٰ کی نعمت عظمیٰ ہے،پاکستان کا بچہ بچہ ملکی سلامتی کے دفاع کیلئے تیار ہے،پاکستان کی سلامتی،دفاع اور تحفظ کے لیے علماء کرام نے ہمیشہ قوم کو تیار رکھا ہے اور آئندہ بھی قوم کو بیدار رکھیں گے انہوں نے کہا کہ سانحہ تلمبہ پر ممبران امن کمیٹی کا کردار امن کے لئے قابل ستائش رہا-دیگر مقررین نے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ افواج پاکستان اور قومی سلامتی کے لیے تمام ادارے ملک و قوم کے لیے باعث فخر ہیں، ہماری بہادر مسلح افواج اورسیکورٹی اداروں نے ملک پاکستان کے دفاع کو مضبوط بنایا ہے پاکستان کے استحکام اور سلامتی کے لیے لازوال اور بے مثال قربانیاں دی ہیں، ہم پوری قوم افواج پاکستان کی قربانیوں کو سلام اور خراج تحسین پیش کرتے ہیں،مقررین نے کہا کہ ملک دشمن طاقتیں پاکستان کے اتحاد،امن و یکجہتی کو نقصان پہنچانا چاہتی ہیں ہمیں بیدار رہنا ہو گا اور دشمن کی تمام سازشوں کو ناکام بنانا ہوگا،ہمسایہ ملک بھارت پاکستان میں دہشت گردی بدامنی اور فرقہ واریت کے ذریعے انتشار و عدم استحکام پیدا کرنا چاہتی ہے پوری قوم کو ملکر دشمن کی سازشیں ناکام بنانا ہوں گی،اس کانفرنس میں  اے ڈی سی جی اختر منڈھیرا,ڈی ایس پی اظہر حسین، راؤمحمد عامر صدر بار،علامہ محمدرشید ترابی،علامہ محمد کاظم نقوی،مولانا قاضی عبدالغفار قادری،مفتی محمد حسن،قاری سیف اللہ عابد،مولانا رفیق شاہ جمالی،مسعود مجیدخان ڈاھا،نصراللہ خان،رفعت حسین سیال،عبدالمسیع پاسٹر،ہمایوں خان،مولانا فتح محمد حامدی،مولانا شوکت علی سیالوی،خواجہ عبدالماجد صدیقی،مفتی عمرفاروق،میاں اجمل عباس،چوہدری رانا لطیف،چوہدری انور علی،جمیل خان،میاں امام بخش،سخاوت علی سیال،ڈاکٹر شرافت حسین بھٹہ،خاورشفقت بھٹہ، صاحبزادہ سید محمدعبدالبصیر آزاد،سید علی رضا گردیزی،مفتی اویس ارشاد،میربابرعلی،شاہد رضا،مولانا عبداللہ سیالوی، بابو انعام قریشی،مولانا محمد شفیع،شیخ ذوالفقار علی رضوی،سہیل اصغر عابدی، قیصرعباس،سید مصدق مہدی جعفری،سید جعفرامام،میاں عبدالخالق قادری ودیگر علماء کرام ومشائخ عظام اورسیاسی و سماجی شخصیات شریک تھے،کانفرنس کے آخرمیں عالم اسلام کے اتحاد، پاکستان کی سلامتی،ترقی و خوشحالی،استحکام کیلئے اور مقبوضہ کشمیر و فلسطین کے لیے خصوصی دعاکی گئی۔

تشدد

مزید :

ملتان صفحہ آخر -