وفاقی حکومت صوبوں میں قانون کے حوالے سے مماثلت چاہتی ہے، فروغ نسیم 

    وفاقی حکومت صوبوں میں قانون کے حوالے سے مماثلت چاہتی ہے، فروغ نسیم 

  

اسلام آباد(سٹاف رپورٹر) وفاقی وزیر برائے قانون و انصاف بیرسٹر ڈاکٹر محمد فروغ نسیم کی زیر صدارت خیبرپختونخوا میں لاء ریفارمز کے نفاذ کے حوالے سے منعقدہ اجلاس میں  وزیر قانون خیبر پختونخواہ فضل شکور خان، وزارت خارجہ کے افسران، خیبر پختونخواہ کی خاتون محتسب رخشندہ ناز، ایڈووکیٹ جنرل اسلام آباد اور پارلیمانی سیکرٹری برائے قانون و انصاف بیرسٹر ملیکہ بخاری کی شرکت،اجلاس میں سول پروسیجر کوڈ، نادرا کے ذریعے وراثتی سرٹیفکیٹ کے اجراء، خواتین کے جائیداد کے حقوق کے قانون اور اینٹی ریپ لاء زیر بحث آئے۔بیرسٹر فروغ نسیم نے اس موقع پر شرکا کو بتایا کہ وفاقی حکومت اسلام آباد اور دیگر تمام صوبوں میں قانون کے حوالے سے مماثلت چاہتی ہے،صوبوں کی جانب سے اگر کوئی بہتر ترمیم تجویز کی جائے گی تو اسے زیر غور لایا جائے گا،ٹیکنالوجی کے استعمال سے عدالتی نظام کو مزید بہتر بنانا چاہتے ہیں،عدالتی فیصلوں کو ویب سائٹ پر ڈالنے کو یقینی بنایا جائے، وزیر قانون نے ٹیکنالوجی کے استعمال کو عدالتی نظام میں لانے کے لیے اجلاس کے شرکاء سے تجویز پیش کرنے کو کہا۔انہوں نے کہا کہ نظام عدل کو مزید تیز تر کرنا ہے اور اس میں شفافیت لانی ہے،عدالتی نظام کی رفتار کو مزید بڑھانا ہے،عدالتوں سے کام کے بوجھ کو کم کرنے کے لیے مزید اقدامات اٹھانے ہیں۔

 فروغ نسیم 

مزید :

صفحہ اول -