لانگ مارچ سے حکومت بوکھلاہٹ کا شکار،راجہ پرویز اشرف

لانگ مارچ سے حکومت بوکھلاہٹ کا شکار،راجہ پرویز اشرف

  

لاہور (نمائندہ خصوصی)صوبائی دارالحکومت میں پیپلز پارٹی کی طرف سے لانگ مارچ کے خیر مقدمی بینر جھنڈے فلیکسز اور سٹیمرز کو پنجاب ہارٹیکلچر اتھارٹی (پی ایچ اے) کی طرف سے اتارنے کے پیپلز پارٹی وسطی پنجاب کی قیادت نے شدید مذمت کی ہے۔پیپلز پارٹی وسطی پنجاب کے صدر راجہ پرویز اشرف نے کہا کہ حکومت اس وقت بوکھلاہٹ کا شکار ہوچکی ہے،لاہور میں جگہ جگہ سے پارٹی پرچم، پینا فلیکس، بینرز اتارے جارہے ہیں،تمام سیاسی جماعتوں کو حق  ہے کہ  وہ جلسے جلوس کریں، ایسی حرکت سے پتہ چلتا ہے کہ حکومت اپنے حواس میں نہیں رہی۔جنرل سیکرٹری سید حسن مرتضی نے کہا کہ کمشنر لاہورنے یقین دہانی کروائی کہ ہمارا محکمہ ایسی کوئی غیر ذمہ دارانہ حرکت نہیں کریگا،مگر اس کے باوجود روٹ پر لگائے گئے پارٹی پرچم، قائدین کی تصاویر اتارلی گئیں میں اس حرکت کی بھر پور مذمت کرتا ہوں۔انفارمیشن سیکرٹری شہزاد سعید چیمہ نے کہا کہ پی ایچ اے پیپلز پارٹی کیخلاف ریاستی ہتھکنڈے استعمال کرنے سے باز رہے۔پی ایچ اے کو وارننگ دیتے ہیں،ایسی حرکتوں سے باز رہے،آئندہ ایسی فاشسٹ کارروائیوں کو برداشت نہیں کیا جائیگا۔

ڈپٹی انفارمیشن سیکرٹری وسطی پنجاب بیرسٹر عامر حسن نے کہا کہ فاشسٹ حکومت عوامی لانگ مارچ پر لرز اٹھی ہے۔حکومتی ایما پر لاہور اور دیگر شہروں میں پیپلز پارٹی کے بینر اور فلیکسز اتارے جا رہے ہیں۔یاد رکھیں ا یسی حرکتیں کرنیوالی حکومتیں برقرار نہیں رہتیں۔ایسا ہوتا تو آج ایوب ضیاء  اور مشرف قصہ پارینہ نہ بن چکے ہوتے۔نیازی اور بزدار یاد رکھیں آپ جیالوں کا مقابلہ نہیں کر سکتے،پیپلز پارٹی وسطی پنجاب کے سینئر رہنما فیصل میر نے کہا کہ لانگ مارچ کے بینرز اور جھنڈے اتارنا ضیا آمریت کی یاد دلاتا ہے۔وسطی پنجاب اور لاھورکے لاکھوں عوام  6مارچ کو ناصر باغ میں جمع ھوں گے، 8 مارچ کو اسلام آباد میں  نیازی حکومت کے تابوت میں آخری کیل ٹھونک دینگے۔

مزید :

میٹروپولیٹن 1 -