ڈینگی تدارک،کمشنر کی تمام ڈپٹی کمشنرز کوایکشن پلان تیار کرنیکی ہدایت

     ڈینگی تدارک،کمشنر کی تمام ڈپٹی کمشنرز کوایکشن پلان تیار کرنیکی ہدایت

  

پشاور(سٹی رپورٹر)وزیراعلی خیبرپختونخوا محمود خان کی ہدایت پر ڈینگی کے مکمل خاتمے اور موسم کی تبدیلی کے ساتھ ہی ڈینگی پر قابو پانے کیلئے پیشگی اقدامات کے حوالے سے اہم اجلاس منعقد ہوا جس میں پشاور ڈویژن کے پانچوں اضلاع پشاور، نوشہرہ، چارسدہ، قبائلی ضلع خیبر اور ضلع مہمند کے ڈپٹی کمشنرز ڈسٹرکٹ ہیلتھ آفیسر اور دیگر متعلقہ اداروں کے انتظامی افسران نے شرکت کی اجلاس میں کمشنر پشاور ڈویژن کو تمام اضلاع کے ڈپٹی کمشنرز نے  اب تک کی گئے پیشگی اقدامات اور عوامی آگاہی مہم پر تفصیلی بریفنگ دی اجلاس میں  پشاور ڈویژن کے تمام ڈپٹی کمشنرز کو 24 گھنٹوں کے اندر ایکشن پلان تیار کرنے کی ہدایت کی گئی اس کے علاوہ تمام ڈپٹی کمشنرز آفسز میں کنٹرول روم قائم کرنے اور لاروے کیخاتمے کے لیے آج سے فوری اقدامات شروع کرنے کی ہدایات جاری کئے گئے اس کے ساتھ ساتھ پہلے سے جاری عوامی آگاہی مہم میں تیزی لانے مساجد، سکولوں، سوشل میڈیا، پرنٹ اور الیکٹرانک میڈیا کے ذریعے بھی احتیاطی تدابیر پر مبنی مہم آج سے شروع کرنے کی ہدایت جاری کیے گئے پہلے سے تعین کردہ حساس مقامات میں آگاہی مہم اور دیگر اقدامات کے لیے چھتیس سو ہیلتھ ورکرز کی خدمات حاصل کرنے اور حفظ ماتقدم کے طور پر حساس مقامات میں میڈیکل کیمپ قائم کرنے بخار والیافراد کی فوری ٹیسٹ کرانے کی ہدایات بھی جاری کیے گئے اس کے علاوہ  بنیادی مراکزصحت کو بھی ادویات، ٹیسٹ اور دیگر سہولیات کی فراہمی کے لیے محکمہ ہیلتھ کو احکامات جاری کیے گئے  کمشنر پشاور ڈویژن ریاض خان محسود نے  تمام تر اقدامات کی از خود براہ راست نگرانی اور کل سے پشاور ڈویژن کیپانچوں اضلاع کے دورے کا اعلان کرتے  8 مارچ کو دوبارہ تمام اضلاع اورمحکموں کی کارکردگی جانچنے کے لیے دوبارہ اجلاس طلب کرلیا اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کمشنر پشاور ڈویژن ریاض خان محسود نے تنبیہ کی کہ تمام تر متعلقہ  ادارے ابھی سے اقدامات شروع کریں اور اپنی اپنی سطح پر اجلاس اس منعقد کر کے فوری طور پر عملی اقدامات شروع کرے ارے سنجیدگی اور عملی اقدامات میں سستی کرنے والے اہلکاروں کی براہ راست رپورٹ ان کو دیتا کہ ان کے خلاف سخت تادیبی کاروائی کی جا سکے انہوں نے واضح کیا کہ اس معاملے میں کسی سے کوئی رعایت نہیں برتی جائے گی۔                           

مزید :

پشاورصفحہ آخر -