لیاقت میموریل ہسپتال کی تعمیر کیلئے کروڑوں کا فنڈ موجود ہے:ضیاء اللہ بنگش

    لیاقت میموریل ہسپتال کی تعمیر کیلئے کروڑوں کا فنڈ موجود ہے:ضیاء اللہ ...

  

کوھاٹ (بیورو رپورٹ) ڈیڈک کمیٹی کوھاٹ کے چیئرمین ایم پی اے ضیاء اللہ بنگش نے کہا ہے کہ لیاقت میموریل ہسپتال کے تعمیراتی کام کے لیے 40 کروڑ کا فنڈ سی اینڈ ڈبلیو کے اکاؤنٹ میں موجود ہے جبکہ ریٹس بابت امور پر بات چیت جاری ہے ٹھیکیدار غلما حبیب تعمیراتی کام شروع کر دے عوام کے نام وڈیو پیغام میں ضیاء اللہ بنگش نے کہا کہ صوبائی حکومت نے 2017 میں کوھاٹ کے کنٹریکٹر غلام حبیب کو دیا تھا جس کی لاگت کا تخمینہ ایک ارب 20 کروڑ تھا انہوں نے اس پر کافی کام بھی کیا ہوا ہے لیکن کچھ عرصہ سے یہ کام بند کیا گیا چونکہ یہ پراجیکٹ 2017 کا تھا اس وقت اور آج کے ریٹ میں کافی فرق آ چکا ہے اور حکومت کے شیڈول ریٹ ہائی ہو چکے ہیں جس پر انہوں نے اس میگا پراجیکٹ کے سی اینڈ ڈبلیو دفتر میں ایک درخواست جمع کرائی کہ ریٹ پر نظرثانی کی جائے ورنہ یہ کام میں شروع نہیں کر سکتا یا یہ ٹھیکہ کسی اور کو دیا جائے سی اینڈ ڈبلیو نے ان کی درخواست صوبائی حکومت کو بھی دی ہے جس پر ضرور ایکشن ہو گا تاہم سی اینڈ ڈبلیو میں 40 کروڑ کا فنڈ پڑا ہے اور فنڈ کا کوئی ایشو نہیں لہٰذا یہ کہنا کہ تعمیراتی کامک کی راہ میں فنڈز کی عدم دستیابی رکاوٹ ہے قطعاً غلط بات ہے اسے سیاسی رنگ ہرگز نہ دیا جائے کام کی بندش کی وجہ فنڈز نہیں ریٹس ہیں ہم متعلقہ کنٹریکٹر کو ایک اور موقع دے رہے ہیں کہ وہ اس منصوبہ پر کام شروع کرے 40 کروڑ کو خرچ کر دیں ہم نے سی اینڈ ڈبلیو کو یہ آپشن بھی دیا ہے کہ ٹھیکیدار کو وہ آخری نوٹس دے دیں بصورت دیگر اس ٹینڈر کو کینسل کر کے فریش ٹینڈر جاری کر دیں تاکہ نئے کنٹریکٹر کے ذریعے اس کام کو پایہ تکمیل تک پہنچایا جا سکے صوبائی حکومت نے یہ بھی ہدایت کی ہے کہ 40 کروڑ خرچ کرنے کے بعد مزید فنڈ جاری کیے جائیں گے۔ 

مزید :

پشاورصفحہ آخر -