روس کی دھمکیوں پر نیٹو چیف کا رد عمل بھی سامنے آ گیا

روس کی دھمکیوں پر نیٹو چیف کا رد عمل بھی سامنے آ گیا
روس کی دھمکیوں پر نیٹو چیف کا رد عمل بھی سامنے آ گیا

  

جوہانسبرگ(ڈیلی پاکستان آن لائن )روس کے یوکرین پر آج چھٹا روز ہے اور لڑائی جاری ہے جبکہ ماسکو نے کیف کی مدد کرنے والوں کو بھی سنگین نتائج کی دھمکیاں دی ہیں جس پر اب نیٹو چیف جینز سٹولٹن برگ کا رد عمل بھی سامنے آ گیاہے ، ان کا کہناہے کہ روس کی نیوکلیئر ہتھیاروں کی دھمکیوں کے باوجود اتحاد کو اپنے جوہری ہتھیاروں کے الرٹ لیول کو تبدیل کرنے کی ضرورت محسوس نہیں ہو رہی ۔

ایسوسی ایٹڈ پریس کے مطابق اتحاد کے سیکریٹری جینز سٹولٹن برگ کا کہناتھا کہ وہ ہمیشہ وہ سب کریں گے جو ہمارے اتحادیوں کی حفاظت کیلئے ضروری ہو گالیکن ہم سمجھتے ہیں کہ ابھی نیٹو کی نیوکلیئر فورسز کے الرٹ کی سطح کو تبدیل کرنے کی ضرورت نہیں ہے ۔

نیٹو چیف کا کہناتھا کہ ہمیں یقین ہے کہ روس جس طرح جوہری ہتھیاروں کے بارے میں بات کر رہاہے وہ لاپرواہی اور غیر ذمہ درانہ ہے ۔جینز نے زور دیتے ہوئے کہا کہ روس متعدد معاہدوں پر دستخط کر چکاہے کہ نیوکلیئر ہتھیاروں کی جنگ کبھی جیتی نہیں جا سکتی اور یہ لڑی بھی نہیں جانی چاہیے ۔انہوں نے روس سے حملہ ختم کرنے اور فوجوں کو یوکرین سے نکالنے کا مطالبہ کیا ۔

پیرکے روز روس اور یوکرین کے وفد کے درمیان بیلا روس میں بات چیت کیلئے ملاقات ہوئی جس کہ بے نتیجہ رہی ہے جس کا جلد ہی اگلادور بھی کیا جائے گا ۔یہ ایک بے گناہ ملک پر ہولناک حملہ ہے اور ہم دیکھ رہے ہیں اس میں عام شہری مارے جارہے ہیں، یہ سفاکیت ہے جسے فوری رکنا چاہیے ۔

مزید :

اہم خبریں -بین الاقوامی -