126فلور ملوں نے سرکاری گندم کا کوٹہ احتجاجاً نہ اُٹھایا، پنجاب حکومت کو کتنے سو کروڑ روپے نہ ملنے کا خدشہ ہے ؟ جانیے

126فلور ملوں نے سرکاری گندم کا کوٹہ احتجاجاً نہ اُٹھایا، پنجاب حکومت کو کتنے ...
126فلور ملوں نے سرکاری گندم کا کوٹہ احتجاجاً نہ اُٹھایا، پنجاب حکومت کو کتنے سو کروڑ روپے نہ ملنے کا خدشہ ہے ؟ جانیے

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app

اسلام آباد (خصوصی رپورٹ)  راولپنڈی  اور اسلام آباد (شمالی پنجاب) کی 126فلور ملوں نے یکم مارچ 2024ء کو بدبو دار‘ ناقص اورمٹی ملی 5ہزار ٹن سرکاری گوداموں سے گندم نہیں حاصل کی اور نہ ہی گزشتہ روز 5 ہزار ٹن یومیہ گندم کی قیمت 58کروڑ روپے سٹیٹ بینک اور محکمہ خوراک کے مجاز بینکوں میں جمع کرا کے چالان لے۔ پاکستان فلور ملز ایسوسی ایشن شمالی پنجاب ریجن کے ایک سینئر عہدیدار کے مطابق 15اپریل 2024ء تک حسب سابق 5 ہزار ٹن یومیہ گندم 126 فلور ملوں کو اُٹھانا تھی۔ اس گندم کی قیمت 2300کروڑ روپے بنتی ہے جو حکومت کو نہیں ملے گی اور سرکاری گوداموں میں 40لاکھ ٹن گندم کا کیری اوور نئی فصل کے موقع پر موجود ہو گا۔

 "جنگ " کے مطابق حکومت پنجاب نے نئی گندم سے سرکاری خریداری چالیس پچاس لاکھ ٹن کی بجائے صرف20 لاکھ ٹن محدود کرنے کا تخمینہ لگایا ہے۔ اس بحرانی صورتحال میں فلور ملنگ انڈسٹری شمالی پنجاب نے وزیراعلیٰ مریم نواز کی حکومت کے تمام سینئر بیورو کریٹس کو 100سےزائد مالکان کے دستخطوں کے ساتھ عرضداشت 24فروری کو بھیجی تھی۔ وزیراعلیٰ فوری نوٹس لیکر پنجاب کی اربوں روپے کی گندم تلف ہونے سے بچائیں۔