ٹیسٹ کھلنا بنگلہ دیشی اوپنر ز کی زبر دست بیٹنگ ،پہلی وکٹ کا ریکارڈ بنا دیا، میچ ڈرا کی طرف گامزن

ٹیسٹ کھلنا بنگلہ دیشی اوپنر ز کی زبر دست بیٹنگ ،پہلی وکٹ کا ریکارڈ بنا دیا، ...

کھلنا(آئی این پی)پاکستان اور بنگلہ دیش مابین پہلے ٹیسٹ کاچوتھے روز بنگلہ دیشی بلے بازوں کے نام‘ ٹیسٹ ڈرا کی طرف جانے لگا‘مضبوط پاکستانی باؤلنگ لائن تمیم اقبال اور امرالقیس کے سامنے ریت کی دیوار ثابت ہوئی ‘ دونوں کی ناقابل شکست سنچریاں‘پاکستان کی پوری ٹیم 638 رنز بنا کر آؤٹ ‘بنگلہ دیش کی طرف سے تاج الاسلام کی 6 وکٹیں‘بنگلہ دیش کے پہلی اننگزکے 332 رنز پر 296 رنز کی برتری کے باوجود پاکستانی باؤلرز نے بیٹسمینوں کی محنت پر پانی پھیر دیا‘تمیم اقبال138 اور امرالقیس132 رنز بنا کر کریز پر موجود۔ میچ کے چوتھے روز ناقص امپائرنگ‘78 کے انفرادی سکور پر تمیم اقبال کو مڈل سٹمپ پر جانے والی گیند پر بھی ایل بی ڈبلیو نہ دیا گیا۔ چوتھے دن جب میچ کاآغاز ہوا تو پاکستان نے 5 وکٹوں پر 537 رنز بنا رکھے تھے اور سرفراز احمد اور اسد شفیق وکٹ پر موجود تھے۔ پاکستان کو چھٹا نقصان 594 کے مجموعی سکور پر اس وقت اٹھانا پڑا جب سرفراز احمد 82 رنز بنا کر آؤٹ ہو گئے اس کے بعد بنگلہ دیش کو ساتویں کامیابی 595 کے سکو رپر ملی اور آنے والے کھلاڑی وہاب ریاض بغیر کوئی رن بنائے پویلین لوٹ گئے۔ پاکستان کو آٹھواں نقصان 617 رنز پر اہم وکٹ اسد شفیق کی صورت میں اٹھانا پڑ ا وہ 83 رنز بنا کر آؤٹ ہوئے۔اس کے بعد یاسر شاہ آؤٹ ہونے والے نویں کھلاڑی تھے جو 617 کے ہی سکور پر 13 رنز بنا کر آؤٹ ہوئے۔ پاکستان کی آخری وکٹ 628 رنز پر گری اور آؤٹ ہونے والے ذوالفقار بابر نے ایک چھکے اور ایک چوکے کی مدد سے 11 رنز بنائے۔ یوں پاکستان نے پہلی اننگز میں 628 رنز بنا کر بنگلہ دیش کے پہلی اننگز کے سکور 332 رنز پر 296 رنز کی سبقت حاصل کر لی۔ کھانے کے وقفے پر بنگلہ دیش نے 4 اوورز میں محض 6 رنز بنا رکھے تھے تاہم وقفے کے بعد تمیم اقبال نے جارحانہ انداز اختیار کیا اور پاکستانی باؤلرز کو مار مار کر بھرکس نکال دیا۔ گراؤنڈ میں تماشائی بھی خوب محظوظ ہوئے تمیم اقبال نے امراء القیس کے ساتھ مل کر عمدہ کھیل پیش کیا اور فاسٹ کے علاوہ سپنرز کی بھی دل کھول کر دھلائی کی ۔ دونوں کھلاڑیوں نے خوبصورت شارٹس کھیلے تاہم چوتھے روز ناقص امپائرنگ کی گئی اور تمیم اقبال جب 78 کے سکور پر کھیل رہے تھے انہوں نے وہاب ریاض کی اندر آنے والی گیند پیڈ پر کھائی تاہم امپائر نے ناٹ آؤٹ قرار دیا جبکہ ری پلے میں واضح دکھائی دیا کہ گیند مڈل سٹمپ پر لگ رہی تھی۔ چوتھے دن کا جب کھیل ختم ہوا تو بنگلہ دیش نے بغیر کسی نقصان کے 273 رنز بنائے تھے اور پاکستان کی ابھی23 رنز کی سبقت باقی تھی۔ تمیم اقبال 4 چھکوں اور 13 چوکوں کی مدد سے 138 اور امراء القیس 3 چھکوں اور 15 چوکوں کی مدد سے 132 رنز بنا کر کریز پر موجود تھے۔ جس کے بعد دکھائی دیتا ہے کہ میچ ڈرا کی جانب گامزن ہے۔

مزید : کھیل اور کھلاڑی