پاکستان بھی مذہبی آزادی کے حوالے سے بدترین صورتحال کے حا مل مما لک میں شامل ہوگیا

پاکستان بھی مذہبی آزادی کے حوالے سے بدترین صورتحال کے حا مل مما لک میں شامل ...
 پاکستان بھی مذہبی آزادی کے حوالے سے بدترین صورتحال کے حا مل مما لک میں شامل ہوگیا

  


واشنگٹن( آن لائن )امریکی کمیشن برائے بین الاقوامی مذہبی آزادی کی حالیہ رپورٹ میں یہ نشاندہی کی گئی ہے کہ پاکستان بھی دنیا کے ان ملکوں میں شامل ہے، جہاں مذہبی آزادی کے حوالے سے بدترین صورتحال موجود ہے۔تاہم اب تک امریکا نے پاکستان کو خصوصی تشویش کا حامل ملک قرار نہیں دیا۔

واضح رہے کہ ایسا درجہ دینے کی صورت میں پاکستان پر اقتصادی پابندیاں عائد ہوسکتی تھیں۔مذکورہ کمیشن نے  اپنی رپورٹ میں ایک مرتبہ پھر پاکستان کو مذہبی آزادی کے بین الاقوامی ایکٹ (آئی آر ایف اے) کے تحت ”خصوصی تشویش کا حامل ملک“ کا درجہ دینے کی سفارش کی ہے۔،اس رپورٹ کے مطابق ہندوستان میں مسلمان برادری بھی ہراساں کیے جانے اور تشدد کے واقعات میں اضافے کا شکار ہے۔انہیں ہندو قوم پرست گروپس اور مقامی و ریاستی سیاستدانوں کی سرپرستی میں شدید نفرت انگیز مہمات کا سامنا کرنا پڑرہا ہے۔ اس کے علاوہ بڑے پیمانے پر میڈیا پروپیگنڈے کے ذریعے مسلمانوں پر دہشت گرد ہونے، پاکستان کے لیے جاسوسی کرنے، ہندو خواتین کو اغوا کرکے انہیں جبری طور پر اسلام قبول کروانے اور ان کے ساتھ شادی کرنے، گائے ذبح کرکے ہندو مذہب کی توہین کرنے کے الزامات عائد کیے جارہے ہیں۔رپورٹ کے مطابق ”پچھلے سالوں کے دوران بڑی تعداد میں ایسے پرتشدد واقعات ہوئے ہیں، جن میں مسلمانوں کی اموات ہوئیں اور انہیں نقل مکانی پر مجبور ہونا پڑا۔

مزید : بین الاقوامی