گجر پورہ سکیم ، ٹوٹی سڑکیں ، جگہ جگہ گندگی ، رہائشی سراپا احتجاج

گجر پورہ سکیم ، ٹوٹی سڑکیں ، جگہ جگہ گندگی ، رہائشی سراپا احتجاج

 لاہور(اپنے خبر نگار سے)لاہور ڈیویلپمنٹ اتھارٹی کی گجر پورہ سکیم کی حالت 33سال بعد بھی نہ سنور سکی ،ٹوٹی پھوٹی سڑکیں ،جگہ جگہ گندگی کے ڈھیر، سکیم میں موجود تمام پارکوں میں سہولتوں کا فقدان ،رہاشیوں کا کہنا ہے کہ اتھارٹی کی سکیم میں کوئی دلچسپی نہیں ایل ڈی اے کی سکیم ہی نہیں لگتی کوئی پرائیویٹ کالونی نظر آتی ہے تفصیلات کے مطابق 1983میں بننے والی گجر پورہ سکیم ابھی تک بنیادی سہولتوں سے محروم ہے سڑکیں ٹوٹی ہوئی ہیں جگہ جگہ گندگی کے ڈھیر لگے ہوئے ہیں اور سکیم کے پارکوں کی بھی ڈیویلپمنٹ نہیں کی گئی سکیم میں جابجا گوبرکے ڈھیر پڑے دکھائی دیتے ہیں جس کی وجہ سے سکیم کے رہائشی بڑے پریشان ہیں رہاشیوں کا کہنا ہے کہ شہری حدود میں مویشیوں پر پابندی ہے لیکن اس کے باوجود گجرپورہ سکیم میں مویشی پھرتے نظر آتے ہیں جن کو نہ تو ایل ڈی اے والے روکتے ہیں اور نہ ہی سٹی گورنمنٹ ان لوگوں کو منع کرتی ہے اس حوالے سے جب ایل ڈی اے کے افسران سے بات کی گئی کہ گجر پورہ سکیم میں صفائی کے انتظامات کیوں نہیں کئے جاتے رہائشی سخت پریشان ہیں اس پر ایل ڈی اے افسران کا کہنا تھا کہ صفائی کی ذمہ داری اور مویشیوں کو شہر سے باہر نکالنا سٹی گورنمنٹ کے سپرد ہے جبکہ کہ پارکوں کی ڈیویلپمنٹ پارکس اینڈ ہارٹیکلچر اتھارٹی کی ذمہ داری ہے ہاں سکیم کی سڑکوں کو بنانا ایل ڈی اے کی ذمہ داری ہے اس حوالے سے چیف انجینئر ایل ڈی اے بہت جلد سکیم کی سڑکوں کا سروے کروائیں گے اور جہاں بھی سڑک بنانی ہوگی اس کو بنایا جائے گا ،جب اس حوالے سے سٹی گورنمنٹ کے افسران سے بات کی گئی تو ان کاکہنا تھا کہ ہمارا عملہ دن رات ہر جگہ موجود ہوتا ہے اگر کہیں سکیم میں مویشی ہیں تو ان کو سکیم سے نکال دے گا باقی صفائی کے حوالے سے سکیم میں جن لوگوں کی ڈیوٹی ہے ان کے خلاف سخت ایکشن لیا جائے گا

مزید : میٹروپولیٹن 1