سانحہ بلدیہ ٹاﺅن کیس کی سماعت، مفرور ملزموں کے ایک بار پھر وارنٹ گرفتاری جاری، سماعت 28 مئی تک ملتوی

سانحہ بلدیہ ٹاﺅن کیس کی سماعت، مفرور ملزموں کے ایک بار پھر وارنٹ گرفتاری ...
سانحہ بلدیہ ٹاﺅن کیس کی سماعت، مفرور ملزموں کے ایک بار پھر وارنٹ گرفتاری جاری، سماعت 28 مئی تک ملتوی

  


کراچی (مانیٹرنگ ڈیسک) عدالت نے سانحہ بلدیہ ٹاﺅن پر جے آئی ٹی رپورٹ لینے سے انکار کرتے ہوئے مفرور ملزموں کے ایک بار پھر وارنٹ گرفتاری جاری کر دیئے ہیں اور کیس کی سماعت 28 مئی تک ملتوی کر دی ہے۔

تفصیلات کے مطابق ایڈیشنل ڈسٹرکٹ جج مقبول میمن نے سانحہ بلدیہ ٹاﺅن کیس کی سماعت کی جس دوران پولیس نے ایم کیو ایم کے مفرو ملزم منصور کی عدم گرفتاری کی رپورٹ پیش کر دی۔ دوران سماعت اے آئی جی لیگل مظہر علوی نے عدالت کو بتایا گیا کہ اس کیس کی تفتیش ایس ایس پی انویسٹی گیشن اختر فاروق کے سپر دہے۔ عدالت نے ریمارکس دیئے کہ تفتیشی افسر دو پیشیوں سے منصور کی گرفتاری پر عدالت کو گمراہ کر رہے ہیں، پولیس کا حال دنیا نے دیکھ لیا ہے، ملک میں انارکی پھیل رہی ہے، اب عدالت کچھ کرے گی۔ عدالت نے مفرور ملزموں کے ایک بار پھر وارنٹ گرفتاری جاری کرتے ہوئے ملزم کی گرفتاری کیلئے اہل افسر مقرر کرنے کی ہدایت بھی کی ہے۔

عدالت نے جے آئی ٹی رپورٹ سے متعلق اپنے ریمارکس میں کہا کہ جے رپورٹ تفتیشی افسر سے طلب کی گئی تھی لیکن جو آپ لائے ہیں وہ عدالت میں پہلے سے ہی موجود ہے لہٰذا جے آئی ٹی رپورٹ کے ساتھ مکمل تحریری رپورٹ پیش کی جائے۔ سابق تفتیشی افسر نے عدالت کے روبرو کہا کہ میں بیمار ہوں اس لئے سماعت پر نہیں آیا جس پر عدالت کا کہنا تھا کہ ویسے بھی کیس میں دلچسپی نہیں، آپ لمبی چھٹیوں پر چلے جائیں۔ عدالت نے اصل جے آئی ٹی رپورٹ تمام تر تفصیلات کے ساتھ طلب کرتے ہوئے کیس کی سماعت 28 مئی تک ملتوی کر دی۔

مزید : کراچی /اہم خبریں