سعودی بن لادن گروپ نے 77 ہزار کارکنان کونوکری سے نکال دیا،تہلکہ خیز انکشاف

سعودی بن لادن گروپ نے 77 ہزار کارکنان کونوکری سے نکال دیا،تہلکہ خیز انکشاف
سعودی بن لادن گروپ نے 77 ہزار کارکنان کونوکری سے نکال دیا،تہلکہ خیز انکشاف

  


ریاض (مانیٹرنگ ڈیسک) سعودی عرب میں حرم شریف کرین حادثے کے بعد بن لادن گروپ مشکلات کا شکار ہے اور اپنے ورکرزکو بھی نکالناشروع کردیاہے جبکہ گزشتہ دنوںنوکری سے نکالے جانے اور تنخواہوں کی عدم ادائیگی پر ملازمین نے مکہ میں کمپنی کی بسیں بھی جلادی تھیں جس کے بعد حالات کشیدہ ہوگئے اور اب برطانوی میڈیا نے انکشاف کیاہے کہ بن لادن گروپ نے مجموعی طورپر 77,000ملازمین کی چھٹی کرادی۔

برطانوی اخبار’میل آن لائن‘کے مطابق کمپنی کے ایک عہدیدار کے حوالے سے مقامی اخبار ’الوطن‘نے انکشاف کیاکہ مجموعی طورپر بن لادن گروپ سے فارغ ہونیوالے 77ہزار ملازمین نے ملک چھوڑنے کے لیے ایگزٹ ویزاحاصل کرلیا، ایک ذریعے نے اے ایف پی کو بتایاتھاکہ تنخواہوں میں تاخیر حکومت کی وجہ سے ہے جس کے ریونیو میں گزشتہ دوسالوں سے تیل کی قیمتوں میں کمی کی آئی ہے ،مسائل کاشکار تعمیراتی کمپنی کے رحم وکرم پر چھوڑدیا جبکہ ملازمین تنخواہوں کے منتظر ہیں ۔ ذرائع نے یہ بھی انکشاف کیاکہ دنیا کے بڑے گروپوں میں سے ایک تعمیراتی گروپ بن لادن کیساتھ دولاکھ غیرملکی ملازمین کام کررہے تھے ۔ذرائع نے بتایاکہ 17000سعودی ملازمین میں سے بھی 12000کو فارغ کیے جانے کا امکان ہے ۔

’الوطن‘ کے مطابق بن لادن کمپنی کے 50ہزار ملازمین نے ملک چھوڑنے سے انکار کردیا ہے کیونکہ چار ماہ سے زائد عرصے سے انہیں تنخواہوں کی ادائیگی نہیں ہوئی جبکہ عرب نیوز نے بھی بڑے پیمانے پر ملازمین کو نکالے جانے کی تصدیق کردی۔

77ہزار ملازمین کو نکالے جانے کے انکشاف پر فوری طورپر کمپنی کا موقف معلوم نہیں ہوسکاتاہم خبررساں ایجنسی کو تحریری طورپر سوال جمع کرانے کی ہدایت کردی۔

مزید : عرب دنیا