3پاکستانی بھائیوں کو ایسی پراسرار بیماری جس کے بارے میں دنیا کی تاریخ میں آج تک کسی نے سنا نہ پڑھا، سورج ڈوبتے ہی۔۔۔

3پاکستانی بھائیوں کو ایسی پراسرار بیماری جس کے بارے میں دنیا کی تاریخ میں آج ...
3پاکستانی بھائیوں کو ایسی پراسرار بیماری جس کے بارے میں دنیا کی تاریخ میں آج تک کسی نے سنا نہ پڑھا، سورج ڈوبتے ہی۔۔۔

  


لاہور(مانیٹرنگ ڈیسک) بلوچستان کے رہائشی تین بھائیوں کو ایک ایسی پراسرار بیماری لاحق ہو گئی ہے کہ دنیا بھر کے میڈیکل سائنس کے ریکارڈ میں ایسی بیماری کا کوئی ذکر تک نہیں ہے۔ یہ تین بھائی 13سالہ شعیب، 9سالہ عبدالرشید اور ایک سالہ الیاس ہیں۔انگریزی اخبار ڈیلی ڈان کی رپورٹ کے مطابق والدین انہیں بلوچستان کے دورافتادہ علاقے سے علاج کے لیے پمز ہسپتال اسلام آباد لے کر گئے۔ والدین نے ڈاکٹروں کو بتایا کہ ” جونہی سورج ڈھلنا شروع ہونا ہے ہمارے بچوں کے جسم مفلوج ہونا شروع ہو جاتے ہیں اور اندھیرے میں مکمل مفلوج رہتے ہیں اور اگلی صبح جیسے ہی سورج طلوع ہوتا ہے ان کے جسم دوبار فعال ہونے لگتے ہیں اور دن کی روشنی میں وہ بالکل ٹھیک ہوتے ہیں۔ہمارے دو بچے اس سے قبل اسی بیماری کی وجہ سے جاں بحق ہو چکے ہیں۔“

ناقابل یقین واقعہ، وہ عورت جسے ڈاکٹروں نے بانجھ قرار دے دیا، پھر ایک حادثہ ایسا ہوا کہ ’اچانک‘ ماں بن گئی

رپورٹ کے مطابق پمزہسپتال اسلام آباد نے ان بچوں کو لاہورکے جناح ہسپتال میں بھیج دیا جہاں ڈاکٹروں کا ایک بورڈ بنایا گیا ہے جس کی سربراہی پمز ہی کے پروفیسر ڈاکٹر جاوید اکرم کر رہے ہیں۔ ڈاکٹر جاوید کا کہنا ہے کہ ”ہم ان بچوں کا مرض دیکھ کر حیران ہیں جس کا دنیا بھر کے دستیاب میڈیکل ریکارڈ میں کوئی سراغ موجود نہیں۔ میں نے اپنے کیریئر میں ایسے مریض پہلی بار دیکھے ہیں۔ رات کے اندھیرے میں یہ بچے بالکل مفلوج ہوجاتے ہیں۔ یہ چل پھر بھی نہیں سکتے اور خود کھانا بھی نہیں کھا سکتے۔ انہیں رات کے وقت ان کے والدین کھلاتے پلاتے ہیں مگر جیسے ہی دن ہوتا ہے یہ دوبارہ ٹھیک ہو جاتے ہیں اور دوڑنے بھاگنے لگتے ہیں۔ہم نے اپنی نوعیت کے اس نایاب کیس پر عالمی ماہرین کے ساتھ مشورہ کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔ ہم اس مقصد کے لیے ایک ویب سائٹ بنا رہے ہیں جس پر ان بچوں کا احوال پوسٹ کیا جائے گا تاکہ دنیا بھر سے ماہرین اس کی تشخیص میں مدد کر سکیں۔“

مزید : ڈیلی بائیٹس