’یونیسکو‘ میں قرارداد پر اسرائیل اور جرمنی میں کشیدگی

’یونیسکو‘ میں قرارداد پر اسرائیل اور جرمنی میں کشیدگی

نیویارک(آن لائن) اقوام متحدہ کے ادارہ برائے سائنس وثقافت ’یونیسکو‘ میں بیت المقدس کے بارے میں اسرائیلی موقف کے خلاف قرارداد پیش کرنے کے معاملے پر جرمنی اور اسرائیل کے درمیان کشیدگی سامنے آئی ہے۔ غیر ملکی میڈیا کے مطابق اسرائیلی وزارت خارجہ کے ذمہ داران کا کہناہے کہ جرمنی نے ’یونیسکو‘ کی انتظامی کمیٹی میں اسرائیل مخالف قرارداد روکنے میں نہ صرف کوئی کردار ادا نہیں کیا بلکہ برلن نے عرب ممالک کیساتھ ساز باز کرکے یورپی ملکوں کو بھی قرارداد کے خلاف رائے شماری میں حصہ لینے سے روکنے کی کوشش کی ہے۔اسرائیلی وزارت خارجہ کے ایک عہدیدار نے اپنی شناخت ظاہر نہ کرنے کی شرط پر بتایا کہ ’یونیسکو‘ میں پیش کی جانے والی قرارداد ایک حساس معاملہ ہے۔

یہ قرارداد عرب ممالک کی طرف سے پیش کی جائے گی جس میں بیت المقدس میں اسرائیلی سرگرمیوں کی سخت مخالفت کی گئی ہے۔ اسی طرح قرارداد میں اسرائیل کی غزہ کے بارے میں پالیسی اور غرب اردن میں الخلیل شہر میں قائم حرم ابراہیمی کے حوالے سے اقدامات کو بھی تنقید کا نشانہ بنایا گیا ہے، جس پر صہیونی ریاست سیخ پا ہے۔

مزید : عالمی منظر