سپریم کورٹ کے فیصلے پر دونوں فریقین نے مٹھائیاں تقسیم کیں لیکن فیصلہ تسلیم نہیں کیا جاتا:میاں افتخار

سپریم کورٹ کے فیصلے پر دونوں فریقین نے مٹھائیاں تقسیم کیں لیکن فیصلہ تسلیم ...

تیمرگرہ ( بیو رورپو رٹ )عوامی نیشنل پارٹی کے مرکزی جنرل سیکرٹری میاں افتخار حسین نے کہا ہے کہ عوامی نیشنل پارٹی حکومت اور اپوزیشن کی خواہش پرنہیں چلتی بلکہ اصولوں پر چلتی ہے اگر جمہوریت میں کسی کی ذاتی خواہش پروزیراعظم سے استعفیٰ طلب کیا جائے تو ملک کیساچلے گا عوامی نیشنل پارٹی وزیراعظم کے خلاف کسی تحریک کا حصہ نہیں بنے گی پانامہ لیکس پرسپریم کورٹ کا مکمل فیصلہ آنے کا انتظار کی جائے اوراس پرمن وعن عمل ہونا چاہیے سپریم کورٹ کی فیصلہ پر دونوں فریقین نے مٹھائیاں تقسیم کی تھی لیکن پھر بھی سپریم کورٹ کی فیصلے کو نہیں ماناجارہا ہے اور اپنی ذاتی خواہش کیلئے ملک کو بحرانوں کی طر ف دھکیلاجارہاہے ان خیالات کا اظہار میاں افتخار حسین نے تیمرگرہ میں پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کیا اس موقع پرعوامی نیشنل پارٹی کے ضلعی صدر حسین شاہ یوسفزئی ، محمد شاہ ، انجیئنرمختیار خان ، آصف عزیز، عمران ٹھاکر ودیگرقائدین بھی موجود تھے میاں افتخارحسین نے مزید کہا کہ گڈاور بیڈطالبان کے خلاف بلاتفریق کارروائی ہونی چاہیے طالبان ترجمان احسان اللہ احسان ایک قومی مجرم ہے اور انہوں نے بے گناہ شہریوں اور سیکورٹی فورسزکے اہلکاروں کو شہید کرنے کی اعتراف کیا ہے اور ان کو سخت سزا دینا چاہیے اور ان کو ہیرو کی طور پیش نہ کی جائے انہوں نے کہا کہ مشال بے گناہ ہے اور ان کے خلاف توہین رسالت کی کوئی ثبوت نہیں ملی ہے اور مشال کیس میں ملوث تما م افراد کوچوک میں پھانسی سے لٹکا جائے ہم چیف جسٹس سپریم کورٹ کے مشکور ہے کہ جنہوں نے مشال کیس پر سوموٹو ایکشن لیا انہوں نے کہا کہ مردم شماری پر ہمارے تحفظات ہے کیونکہ مردم شماری میں پختونوں کیساتھ نارواسلوک کیا جارہاہے اور پختونوں کی اکثریت کو اقلیت میں تبدیل کرنے کی کوشش کی جارہی ہیں انہوں نے کہا کہ پختونوں کی شناختی کارڈز گزشتہ آٹھ سال سے بلاک ہے ہم نے حکومت سے کئی بار بات کی لیکن حکومت اس مسئلہ میں خاموش تھی اس وجہ سے عوامی نیشنل پارٹی نے پارلیمنٹ کے سامنے احتجاج کیا اگر حکومت نے پھر بھی پختونوں کی شناختی کارڈز کامسئلہ حل نہیں کیا توبھرپور احتجاج کیا جائیگا انہوں نے کہا کہ سی پیک پر وریر اعظم نے اپنا وعدہ پورا نہیں کیا انہوں نے کہا کہ قبائل کو خبیر پختونخوامیں ضم تو کیا گیا ہے لیکن اب تک اس کیلئے آئینی اقدامات کئے گئے ہیں انہوں نے کہا کہ فوج اورحکومت کے درمیان محازآرائی ٹھیک نہیں اورفوج اور حکومت کو معاملات میڈیا میں لے جانے کی بجائے مل بیٹھ کر حل کرتے تو یہ مکل کیلئے اچھا ہوتا انہوں نے کہا کہ محنت کش افضل لوگ ہے اور حکومت مزدورں انکے حقوق اور ان کے بچوں کو مفت تعلیم دی جائے انہوں نے کہا کہ انے والادور عوامی نیشنل پارٹی کا ہے۔۔۔

مزید : کراچی صفحہ اول