سی پیک سے پاکستان ترقی کے نئے دور میں داخل ہوجائے گا، اکرم ذکی

سی پیک سے پاکستان ترقی کے نئے دور میں داخل ہوجائے گا، اکرم ذکی

مردان (بیورورپورٹ ) پاکستان انٹرنیشنل ہیومن رائٹس آرگنائزیشن کے مرکزی چیئرمین اورسابق سیکرٹری خارجہ اکرم ذکی نے کہاہے کہ اپوزیشن کی تقسیم موجودہ حکومت کی خوش قسمتی ہے سی پیک سے پاکستان ترقی کے نئے دور میں داخل ہوجائے گا ،مزدوروں کی حالت زار بدلنے کے لئے حکومت کو اقدامات اٹھانے ہوں گے وہ مردان پریس کلب میں پاکستان انٹرنیشنل ہیومن رائٹس آرگنائزیشن کے زیراہتمام یوم مزدور کے حوالے سے منعقدہ سیمینار سے خطاب اوربعدازاں میڈیا سے گفتگو کررہے تھے سیمینار سے ڈسٹرکٹ ناظم حمایت اللہ مایار ،آرگنائزیشن کے مرکزی صدر حبیب ملک اورکزئی،اسسٹنٹ کمشنر پرویز اقبال اور دیگر نے بھی خطاب کیا اس موقع پرسیمینار کے مہمان خصوصی اور مرکزی چیئرمین اکرم ذکی نے پاکستان ہیومن رائٹس آرگنائزیشن کے ضلعی چیئرمین مزمل خان،ضلعی جنرل سیکرٹری گوہر علی شاہ ،چیف آرگنائزر اختر حسین اوران کے کابینہ سے حلف لیا اورانہیں مبارک باددیتے امیدظاہر کی کہ وہ غریب اور بے سہارا افراد کے مسائل اجاگر کرنے اورمظلوم افراد کی آواز بنیں گے سیمینار سے خطاب کرتے ہوئے اکرم ذکی نے شگاگو کے مزدوروں کو خراج تحسین پیش کرتے ہوئے کہاکہ ان کی قربانیوں سے دنیا بھر کے مزدوروں کی حالت زار میں بہتری اورڈیوٹی کے اوقات کارمقررکردیئے گئے ہیں انہوں نے کہاکہ ملک میں لیبر قوانین پر عمل درآمد نہیں ہورہا جس کے بعد مزدور طبقہ گو ناگو مسائل کا شکارہے انہوں نے کہاکہ چائلڈ پروٹیکشن قوانین موجودہیں اس کے باوجودبچوں سے مشقت لی جارہی ہے جو تشویشناک عمل ہے سیمینار میں ایک قرارداد کے ذریعے مطالبہ کیاگیاکہ مزدوروں کے لئے پارلیمنٹ میں خصوصی نشتیں مختص کی جائیں تاکہ وہ اپنے مسائل کی نشاندہی اوراس کے حل کے لئے اسمبلیوں کے سطح پر آواز اٹھاسکیں بعدازاں میڈیا سے گفتگو میں سابق سیکرٹری خارجہ اکرم ذکی کاکہناتھاکہ سی پیک ایک بہت بڑا منصوبہ ہے اورا س کے طفیل روس بھی پاکستان کے قریب ہورہاہے انہوں نے کہاکہ ڈان لیکس پر حکومت کوفوری خطرہ نہیں کیونکہ اپوزیشن خود تقسیم درتقسیم ہے جس کا تمام فائدہ حکمرانوں کو ہورہاہے قبل ازیں اکرم ذکی کی قیادت میں یوم مزدور کے حوالے سے ریلی نکالی گئی جس میں ضلع ناظم حمایت اللہ مایار ،پریس کلب مردان کے صدر ایم بشیرعادل سمیت مزدوروں ان کے بچوں اورسول سوسائٹی کی کثیرتعداد شریک ہوئی ریلی کے شرکاء نے پلے کارڈ اٹھارکھے تھے جن پر اس دن کی اہمیت کے حوالے سے نعرے درج تھے ۔

مزید : پشاورصفحہ آخر