ڈان لیکس تحقیقاتی کمیٹی کی مکمل سفارشات منظر عام پر لائی جائیں،فوج کے جذبات و احساسات کا خیال رکھنا سیاسی ومذہبی قیادت کی ذمہ داری ہے:طاہر محمود اشرفی

ڈان لیکس تحقیقاتی کمیٹی کی مکمل سفارشات منظر عام پر لائی جائیں،فوج کے جذبات ...
ڈان لیکس تحقیقاتی کمیٹی کی مکمل سفارشات منظر عام پر لائی جائیں،فوج کے جذبات و احساسات کا خیال رکھنا سیاسی ومذہبی قیادت کی ذمہ داری ہے:طاہر محمود اشرفی

  

فیصل آباد(ڈیلی پاکستان آن لائن) ڈان لیکس کی تحقیقاتی کمیٹی کی مکمل سفارشات منظر عام پر لائی جائیں ،ملکی اور عالمی حالات تقاضہ کرتے ہیں کہ محاذآرائی سے ہر صورت بچا جائے اور پاکستان دشمن قوتوں کو ناکام بنانے کیلئے متحد ہو کر استحکام پاکستان کیلئے جدوجہد کی جائے، جمہوری نظام کی کامیابی کیلئے ضروری ہے کہ سیاسی اور مذہبی قائدین جمہوری رویہ اپنائیں ، وزیر اعظم ملک کے حالات کے پیش نظر فوری طور پر آل پارٹیز کانفرنس بلائیں، ہندوستان اور افغانستان کے خفیہ اداروں کی سازشوں کو عالمی دنیا کے سامنے بے نقاب کیا جائے ۔

یہ بات پاکستان علماء کونسل کے مرکزی چیئرمین اور وفاق المساجد پاکستان کے صدر حافظ محمد طاہر محمود اشرفی نے فیصل آباد میں پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کہی ۔ اس موقع پر مولانا محمد ایوب صفدر ، قاری محمد ادریس قاسمی ، حاجی محمد طیب قادری ، مولانا محمد اشفاق پتافی ، مولانا حبیب الرحمن عابد ، مولانا محمد ضیاء مدنی ، مولانا محمد طیب گورمانی، میاں محمد ارشاد ، مولانا سعد اللہ لدھیانوی ، مولانا شعیب بخاری، مولانا طاہر گجر، قاری عمر گجر، قاری ابو بکر قاسمی ، ڈاکٹر خالد رؤف ، مولانا غلام اللہ خان اور دیگر بھی موجود تھے۔ حافظ محمد طاہر محمود اشرفی نے کہا کہ پاکستان کی سلامتی اور استحکام کے خلاف کسی بھی سازش کے خلاف پوری قوم متحد ہے ، ڈان لیکس کے معاملہ پر جو بد مزگی پیدا ہوئی اس کے حل کیلئے فوری طور پر وزیر اعظم کو خود کردار ادا کرنا چاہیے۔ انہوں نے کہا کہ پاکستان کی فوج بھی پاکستانی قوم کا حصہ ہے، فوج کے جوانوں کے جذبات اور احساسات کا خیال رکھنا سیاسی اور مذہبی قائدین کی ذمہ داری ہے ۔ انہوں نے کہا کہ پاکستان علماء کونسل ملک بھر میں انتہاء پسندی ، دہشت گردی کے خلاف جدوجہد کر رہی ہے اور رمضان المبارک میں ملک بھر میں افطار وصائم پروگرام شروع کیے جائیں گے اور حجاج و زائرین کی سہولت کیلئے عربی زبان کے مختصر دورانیہ کے پروگرام شروع کیے جائیں گے،3 مئی کو اسلام آباد میں استحکام پاکستان کانفرنس ہو گی ۔ انہوں نے سعودی عرب کے امن کے اداروں کی طرف سے مسجد نبوی ﷺ میں گذشتہ سال خود کش حملہ کرنے کی کوشش کرنے والے مجرموں اور نیٹ ورک کی گرفتاری کو قابل تحسین قرار دیتے ہوئے کہا کہ انتہاء پسندی اور دہشت گردی کے خلاف عالمی اسلامی عسکری اتحاد کے ساتھ ساتھ عالمی فکری اتحاد کے قیام کی طرف پیش رفت ہو رہی ہے اور رمضان المبارک کے بعد عالمی اسلامی فکری اتحاد معرض وجود میں آ جائے گا ۔

ایک سوال کے جواب میں حافظ محمد طاہر محمود اشرفی نے کہا کہ سعودی عرب کے سلامتی اور امن کے اداروں نے گذشتہ سال مکہ المکرمہ اور مدینہ منورہ پر حملے کی کوششوں کو ناکام بنا کر ثابت کیا ہے کہ وہ ہی ارض حرمین الشریفین کی سلامتی اور استحکام اور دفاع کیلئے اہل ہیں۔ ایک سوال کے جواب میں انہوں نے کہا کہ سوشل میڈیا پر ملک کے سلامتی کے اداروں اور پاک فوج کے خلاف چلنے والی مہم کا فوری طور پر وزیر داخلہ نوٹس لیں اور اس مہم کو چلانے والوں کو گرفتار کیا جائے اور منظر عام پر لایا جائے۔ ایک سوال کے جواب میں انہوں نے کہا کہ اگر 24 گھنٹے میں ڈان لیکس کی سفارشات منظر عام پر نہ آئیں تو کل استحکام پاکستان کانفرنس میں آئندہ کے لائحہ عمل کا اعلان کریں گے ۔ایک اور سوال کے جواب میں انہوں نے کہا کہ پاکستان علماء کونسل ایک ہی ہے اور وہ الیکشن کمیشن اور ملک کے دیگر اداروں میں میری چیئرمین شپ میں کام کر رہی ہے۔

مزید : فیصل آباد