سیشن عدالت نے قتل کے 2مختلف مقدمات میں ملوث 2مجرموں کو سزائے موت کا حکم سنا دیا

سیشن عدالت نے قتل کے 2مختلف مقدمات میں ملوث 2مجرموں کو سزائے موت کا حکم سنا دیا
سیشن عدالت نے قتل کے 2مختلف مقدمات میں ملوث 2مجرموں کو سزائے موت کا حکم سنا دیا

  

لاہور(نامہ نگار)سیشن عدالت نے قتل کے 2مختلف مقدمات میں ملوث 2مجرموں کو سزائے موت اور جرمانے کی سزا کا حکم سنا دیا ہے ۔پہلے مقدمہ میں ایڈیشنل سیشن جج اعجاز احمد نے غالب مارکیٹ میں قتل ہونے والے لڑکے بھولا کے قتل کے مقدمہ میں ملوث مجرم احمد عبداللہ کو سزائے موت اور 5لاکھ روپے ہرجانے کی سزا کا حکم سنا دیا ہے ۔

مسلم لیگ ن کے جلسے میں شرکت کیلئے دو ہزار روپے دیئے جانے کی حقیقت سامنے آگئی

عدالت میں تھانہ غالب مارکیٹ پولیس نے غالب مارکیٹ کے بھولا کے قتل کا چالان پیش کررکھا تھا، مقدمہ کے چالان میں پولیس نے احمد عبداللہ کو نامزد کیا تھا ،عدالت میں پولیس نے موقف اختیار کیا کہ احمد عبداللہ نے معمولی جھگڑے پر فائرنگ کرکے بھولا نامی شخص کوقتل کردیا تھا، عدالت نے گزشتہ روز وکلاءکے دلائل سننے کے بعد مجرم احمد عبداللہ کو سزائے موت اور 5لاکھ روپے جرمانے کی سزا کا حکم دے دیا ہے،دوسرے مقدمہ میں ایڈیشنل سیشن جج لیاقت علی کھرل نے گجرپورہ میں لیاقت علی کو قتل کرنے پر مجرم شہباز عرف بوٹا کو سزائے موت اور 3لاکھ روپے جرمانے کی سزا کا حکم سنا یا ہے ۔

عدالت میں گجرہ پورہ پولیس نے ملزم شہباز عرف بوٹا کے خلاف قتل کا چالان پیش کیا چالان میں ملزم پر الزام تھا کہ اس نے ایک کارخانے میں کام کے دوران ذاتی دشمنی پر لیاقت علی کو گولی مار کر قتل کردیا تھا۔مذکورہ مجرم کے خلاف 15گواہوں کو عدالت میں پیش کیاگیا، عدالت نے گوا ہوں کے بیان اور وکلا کی بحث کے بعد مذکورہ بالا سزا کا حکم سنا یا ہے ،مجرم کے خلاف تھانہ گجرپورہ پولیس نے 2011ءمیں مقدمہ درج کیا تھا۔

مزید : لاہور