کرپشن الزامات،سی اینڈ ڈبلیو کے ایگزیکٹو انجینئر کی ترقی روک لی گئی

        کرپشن الزامات،سی اینڈ ڈبلیو کے ایگزیکٹو انجینئر کی ترقی روک لی گئی

  

لاہور(ارشد محمود گھمن /سپیشل رپورٹر) چیف سیکرٹری پنجاب نے محکمہ سی اینڈ ڈبلیو کے گریڈ 18 کے ایگزیکٹو انجینئر (مکینیکل ہائی وے ڈویژن لاہور) نوراقبال کی قومی خزانہ کے کروڑں روپے خورد برد کرنے اوراینٹی کرپشن میں درج متعدد مقدمات میں ملوث ہونے پر ترقی روک لی۔تفصیلات کے مطابق گریڈ 18کے ایگزیکٹو انجینئر نور اقبال جو کہ مکینیکل ہائی ویز ڈویژن لاہور میں تعینات ہے،چیف سیکرٹری کی زیر صدارت ہونے والے پروموشن بورڈ کے اجلاس میں معلوم ہوا کہ مذکورہ افسر نے مختلف اضلاع جن میں ساہیوال، ملتان،مظفر گڑھ،گوجرانوالہ وغیرہ شامل ہیں،میں تعیناتی کے دوران قومی خزانہ میں کروڑوں کی مبینہ کرپشن کی۔ الزامات پراینٹی کرپشن میں درج متعدد مقدمات کے باعث سیکرٹری سی اینڈ ڈبلیو کو بھجوائی جانے والی منٹس رپورٹ میں مذکورہ افسر کی گریڈ19میں دی جانے والی ترقی روک لی،مگر حیران کن امریہ ہے کہ محکمہ سی اینڈ ڈبلیو کے اعلیٰ افسران نے اس کے باجود انہیں نوازتے ہوئے ایگزیکٹو انجینئربلڈنگ 2 اور ایگزیکٹوانجینئر بلڈنگ 7کے دواضافی چارج سونپ دیئے ہیں۔

ترقی روک ل

مزید :

صفحہ آخر -