دنیا بھر میں محنت کشوں کی بے روزگاری، پاکستان نے معاملہ عالمی سطح پر اٹھا دیا

دنیا بھر میں محنت کشوں کی بے روزگاری، پاکستان نے معاملہ عالمی سطح پر اٹھا دیا

  

اسلام آباد (سٹاف رپورٹر) پاکستان نے محنت کشوں کی بیروزگاری کا معاملہ عالمی سطح پر اٹھا دیا اور محنت کشوں کی بڑے پیمانے پر برطرفی کا نوٹس لینے کا مطالبہ کردیا، زلفی بخاری نے کہا کہ ہر ممکن کوشش ہے مزدوروں کو بے روزگاری سے بچایا جا سکے۔تفصیلات کے مطابق کورونا وائرس کے باعث دنیا بھر میں پاکستانی محنت کش متاثر ہیں، اس سلسلے میں وزیراعظم عمران خان اورمعاون خصوصی زلفی بخاری بھی متحرک ہیں۔پاکستان نے محنت کشوں کی بیروزگاری کا معاملہ عالمی سطح پر اٹھا دیا، وزیراعظم عمران خان کی ہدایت پر معاون خصوصی زلفی بخاری کاانٹرنیشنل لیبرآرگنائزیشن کے ڈائریکٹر جنرل کو خط لکھا، جس میں بیرون ملک کام کرنیوالی ورک فورس کو پہنچنے والے نقصان پرسخت تشویش کا اظہار کیا۔خط میں عالمی سطح پر محنت کشوں کی بڑے پیمانے پر برطرفی کا نوٹس لینے کا مطالبہ کیا ہے، معاملے کے پیش نظر ممبر ممالک،اسٹیک ہولڈرزکاہنگامی اجلاس بلانے کی درخواست بھی کی گئی ہے اور بیرون ملک محنت کشوں کی ملازمتوں کوتحفظ دینے کیلئے سیفٹی نیٹ بنانے کی تجویز دی گئی۔معاون خصوصی زلفی بخاری نے کہا کہ صرف پاکستان نہیں خطے کے دیگر ممالک کے محنت کش بھی متاثر ہوئے، تمام ممالک کو ہنگامی صورت حال کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے، لیبر ڈے پرمزدوروں کے تحفظ کیلئے عالمی سطح پرکوشش شروع کرناہوگی۔وزیراعظم نے زلفی بخاری کوبیرون ملک مقیم محنت کشوں کاخصوصی خیال رکھنے کی ہدایت کی، اس حوالے سے زلفی بخاری کیپاکستانی ورک فورس رکھنے والے متعدد ممالک سے رابطے جاری ہے اور مزدوروں کو بے روزگاری سے بچانے کیلئے مختلف آپشنز پر غور کیا جارہا ہے جبکہ محنت کشوں کو مفت سہولتوں سمیت تنخواہوں کی ادائیگی کے طریقہ کار پربھی بات چیت جاری ہے۔زلفی بخاری کا کہنا ہے کہ مشکل وقت میں حکومت اپنے محنت کشوں کا حوصلہ بنے گی، ہر ممکن کوشش ہیمزدوروں کو بے روزگاری سے بچایا جا سکے۔

زلفی بخاری

مزید :

صفحہ اول -