نوجوانوں کو لاک ڈاؤن میں اسلامی تاریخ کا مطالعہ کرنا چاہیے: وزیراعظم

      نوجوانوں کو لاک ڈاؤن میں اسلامی تاریخ کا مطالعہ کرنا چاہیے: وزیراعظم

  

اسلام آباد (مانیٹرنگ ڈیسک) وزیراعظم عمران خان نے کورونا وائرس کے باعث جاری لاک ڈاؤن کے دوران نوجوانوں کو اسلامی تہذیب اور تاریخ پر مبنی کتاب پڑھنے کی تلقین کر دی۔سماجی رابطوں کی ویب سائٹ پر جاری اپنے ایک بیان میں وزیراعظم عمران خان نے لکھا ہے کہ کورونا وباء کے باعث جاری لاک ڈاؤن کے دوران نوجوان اسلامی تہذیب اور تاریخ کا مطالبہ کریں، اس حوالے سے وزیراعظم نے نوجوانوں کو فراس الخطیب پڑھنے کی تجویز دی۔بندشوں (لاک ڈاؤن) کے موسم میں ہمارے نوجوانوں کے مطالعے کیلئے ایک لاجواب انتخاب۔ یہ کتاب ان تاریخی عوامل کا نہایت خوبصورت مگر مختصر مجموعہ ہے جنہوں نے تمدنِ اسلامی کو اپنے دور کی عظیم ترین تہذیب کی شکل دی اوران عوامل سے پردہ اٹھاتی ہے جو اس کے زوال کی وجہ بنے۔اپنی بات جاری رکھتے ہوئے وزیراعظم عمران خان نے ٹویٹ میں مزید لکھا ہے کہ فراس الخطیب مسلمانوں کی تاریخ سے متعلق زبردست کتاب ہے، اس میں مسلمانوں کے عروج اور زوال کی وجوہات کی داستان درج ہے۔علاوہ ازیں محنت کشوں کے عالمی دن پر وزیراعظم عمران خان نے اپنے خصوصی پیغام میں کہا کہ یہ دن مزدوروں کے وقار، محنت کے تقدس کی علامت اور معاشی ترقی کیلئے کارکنوں کی اہمیت کا اعتراف ہے۔یوم مزدور کے موقع پر وزیر اعظم عمران خان نے کہا کہ پی ٹی آئی حکومت مزدوروں کو بنیادی حقوق کی فراہمی اور فلاح و بہبود کیلئے پرعزم ہے جبکہ محنت کشوں کی فلاح کیلئے مربوط نظام تیار کرنا ترجیح ہے۔انہوں نے کہا کہ کورونا کے پھیلاؤ نے لوگوں کی صحت پر سنگین اثرات مرتب کئے ہیں، صنعتی شعبہ کی بندش سے مزدور طبقہ پر براہ راست اثر پڑا ہے، حکومت نے مزدوروں کیلئے 200 ارب کا مالی پیکیج مختص کیا ہے۔

وزیراعظم عمران خان

مزید :

صفحہ اول -