مہنگائی کی شرح میں 10ماہ بعد نمایاں کمی، اپریل میں 8.5فیصد رہی، ادارہ شماریات

  مہنگائی کی شرح میں 10ماہ بعد نمایاں کمی، اپریل میں 8.5فیصد رہی، ادارہ شماریات

  

اسلام آباد (سٹاف رپورٹر)وفاقی ادارہ شماریات نے مہنگائی سے متعلق اعدادوشمار جاری کر دئیے، اپریل میں مہنگائی کم ہوکر 8.5 فیصد ہوگئی۔تفصیلات کے مطابق مارچ کے مقابلے میں اپریل میں مہنگائی میں 0.8فیصد کمی ریکارڈ کی گئی۔ مارچ میں مہنگائی کی شرح 10.2 فیصد تھی جو اپریل میں کم ہوکر 8.5 فیصد پر آگئی, جولائی تا اپریل کے دوران مہنگائی کی شرح 11.2 فیصد رہی۔ ادارہ شماریات کی رپورٹ کے مطابق مارچ کے مقابلے میں اپریل میں مہنگائی کی شرح میں 0.84 فیصد کمی ریکارڈ کی گئی۔ادارہ شماریات کے مطابق اپریل میں دال مسور کی قیمت میں 27.5 فیصد دال مونگ 23.1 فیصد تازہ پھل 17.7 فیصد انڈے 14.1 فیصد دال ماش 14 فیصد دال چنا 11فیصد بیسن 8 فیصد چنے 4.4 فیصد اور چینی 2.5 فیصد مہنگی ہوئی۔ اعدادو شمار کے مطابق اپریل میں پیاز کی قیمت میں 23 فیصد چکن 22 فیصد ٹماٹر 11 فیصد تازہ دودھ 4.3 فیصد سبزیاں 4 فیصد گندم 3.3 فیصد گھی 1 فیصد کی کمی ہوئی، ایک سال میں دال مونگ کی قیمت میں 101 فیصد آلو 92 فیصد دال ماش 68 فیصد دال مسور 48 فیصد انڈے 44 فیصد مہنگے ہوئے۔ادارہ شماریات کے مطابق ایک سال میں پیاز 40 فیصد دال چنا 31 فیصد چینی 28 فیصد گھی 26 فیصد کوکنگ آئل 22 فیصد گندم 17 فیصد آٹا 15 فیصد گوشت 14 فیصد چنے 12.5 فیصد چائے 10 فیصد مہنگے ہوئے،ایک سال میں گیس بل میں 55 فیصد تعمیراتی سامان 16.6فیصد گاڑیاں 14 فیصد ادویات 13 فیصد جوتے 11.5 فیصد گاڑیوں کا سامان 11 فیصد اضافہ ہوا۔ ادار ہ شماریات کے مطابق ایک سال میں ٹماٹر کی قیمت میں 55 فیصد،چکن 29 فیصد اور بجلی اخراجات میں 6 فیصد کمی ہوئی۔

ادارہ شماریات

مزید :

صفحہ اول -