کورونا وائرس کے ووہان کی تجربہ گاہ سے تعلق کے شواہد خود دیکھے ہیں: صدر ٹرمپ

      کورونا وائرس کے ووہان کی تجربہ گاہ سے تعلق کے شواہد خود دیکھے ہیں: صدر ...

  

واشنگٹن(اظہر زمان،بیوروچیف) صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے واضح طور پر بتایا ہے کہ انہوں نے کرونا وائرس کے چینی شہر ووہان کی تجربہ گاہ سے تعلق کے شواہد خود دیکھے ہیں۔ جمعرات کی شام وائٹ ہاؤس کی پریس بریفنگ میں ایک سوال کا جواب دیتے ہوئے یہ تبصرہ کیا اور اس طرح اپنی ہی انٹیلی جنس کمیونٹی کے موقف کی تردید کی جس کا کہنا ہے کہ اس سلسلے میں حتمی نتیجہ اخذ کرنے کیلئے تفتیش کا سلسلہ جاری ہے۔ جب صدر ٹرمپ سے ان کے بیان کی تفصیل پوچھی گئی تو انہوں نے بتایا کہ وہ نہیں بتا سکتے کیونکہ انہیں میڈیا کو یہ بتانے کی اجازت نہیں ہے۔ صدر ٹرمپ کے اس تبصرے سے چند گھنٹے قبل ڈائریکٹر نیشنل انٹیلی جنس کے دفتر سے ایک بیان جاری ہوا تھا جس میں کہا گیا تھا کہ وہ اس معاملے کا گہرا جائزہ لے رہے ہیں تاکہ یہ کھوج لگایا جا سکے کہ کرونا وائرس متاثرہ جانوروں کو گوشت مارکیٹ میں چھونے سے انسانوں میں منتقل ہوا یا ووہان کی تجربہ گاہ میں ایک حادثے کے نتیجے میں اس کا آغاز ہوا۔ صدر ٹرمپ کا کہنا تھا کہ اس سلسلے میں مختلف تصورات پیش کئے جا رہے ہیں لیکن چین بیان کرنے سے گریز کر رہا ہے جو اسے بالآخر بتانے پڑیں گے۔ امریکی میڈیا کے مطابق اگرچہ سائنسدان اور انٹیلی جنس کمیونٹی کا خیال ہے کہ اصل حقائق کو جاننا بہت مشکل کام ہے تاہم امریکی وزیر خارجہ مائیک پومپیو مسلسل انٹیلی جنس کمیونٹی پر دباؤ ڈال رہے ہیں کہ وہ وائرس کی ابتداء یا پیدائش کے بارے میں حقیقت معلوم کرنے کی کوشش کریں۔

صدر ٹرمپ

مزید :

صفحہ اول -