سٹیٹ بینک کی ری فنانس سکیم کامیابی سے جاری

سٹیٹ بینک کی ری فنانس سکیم کامیابی سے جاری

  

اسلام آباد (اے پی پی) سٹیٹ بینک کی جانب سے متعارف کردہ ری فنانس سکیم کامیابی سے جاری ہے اوراب تک مختلف کمپنیوں کی جانب سے 65 ارب روپے سے زائد مالیت کی قرضہ کی درخواستیں موصول ہوئی ہیں۔کورونا وائرس کی وباء سے کاروباربالخصوص چھوٹے اوردرمیانہ درجہ کے کاروبار (ایس ایم ایز) اوربڑی کمپنیوں پرپڑنے والے اثرات کو کم کرنے کیلئے سٹیٹ بینک نے حال ہی میں نئی ری فنانس سکیم کا اعلان کیا تھا، اس سکیم کے تحت سٹیٹ بینک نے قرض پر شرح سود 4 فیصد سے کم کر کے 3 فیصد کر دیا ہے۔ سٹیٹ بینک نے یہ سکیم ملازمین کو تنخواہوں کی ادائیگی آسان بنانے کے لیے متعارف کرائی ہے تاکہ کمپنیاں اورفرمز بحران کے دورمیں ملازمین کوبے روزگاری سے بچائے، اس سکیم کے تحت ضمانت کے تقاضوں میں نرمی اور چھوٹے کاروباری حضرات کے درخواست فارم کو آسان بنا دیا گیا ہے۔ سٹیٹ بینک نے اجرتیں وصول کرنے کے لیے ملازمین کے خصوصی کھاتوں کے علاوہ دیگر آسانیاں بھی پیدا کی ہیں۔ جن اداروں نے جیب سے اپریل کی تنخواہیں ادا کی ہیں وہ بھی یہ رقم حاصل کرسکیں گے۔ سٹیٹ بینک کے ترجمان نے جمعرات کوبتایا کہ مختلف کمپنیوں نے اس سکیم میں اپنی گہری دلچسپی کااظہارکیاہے۔انہوں نے بتایاکہ دوہفتوں کے دوران بینکوں اورمالیاتی اداروں کے پاس مختلف کمپنیوں اورفرمز نے 65 ارب روپے سے زائد کے قرضہ جات کیلئے رابطہ کیاہے جس پرکام ہورہا ہے۔انہوں نے بتایاکہ 700 سے زائد کمپنیاں یہ قرضہ حاصل کررہی ہیں اوراس کے نتیجہ میں 5 لاکھ سے زائد کارکنوں کے روزگارکوتحفظ فراہم کیا جارہا ہے۔

مزید :

کامرس -