تونسہ، اشتہاریوں کاپولیس اہلکاروں کو یرغمال بناکر وحشیانہ تشدد، ملزموں کیخلاف آپریشن شروع

تونسہ، اشتہاریوں کاپولیس اہلکاروں کو یرغمال بناکر وحشیانہ تشدد، ملزموں ...

  

تونسہ،شادن لُنڈ (نمائند گان پاکستان) تھانہ صدر تونسہ کی حدود میں اشتہاری مجرمان نے پولیس پارٹی پر حملہ کردیا،تھانیدار سمیت چار اہلکار زخمی ہو گئے،اشتہاری مجرمان نے پولیس کو حویلی میں یرغمال بنالیا اور تشدد کے دوران ویڈیو بناتے رہے۔ تفصیلات کے مطابق تھانہ صدر تونسہ پولیس کو اطلاع ملی کہ اشتہاری مجرم سجاد عرف سجی کو ٹی سہانی رضوان عرف جگنی ڈمرہ کے گھرمکول کلاں موجود ہے جس پر اے ایس آئی خلیل احمد(بقیہ نمبر49صفحہ6پر)

نفری کے ہمراہ موقع پر پہنچ گئے تھانیدار 3ملازمین کے ہمراہ جوں ہی حویلی میں داخل ہوا گھر میں موجود 12سے زائدافراد جن میں سجاد عرف سجی کوٹی،غلام رسول،رحیم بخش،خدا بخش،امان اللہ،محمد ندیم،محمد شہزاد،محمد شہباز اور اللہ داد شامل ہیں جو کہ اسلحہ،کلہاڑیوں اور ڈنڈوں سے مسلح تھے پولیس کو دیکھتے ہی ان پر ٹوٹ پڑے چاروں اہلکاروں کو رسیوں سے جکڑ کر گھر میں یرغمال بنا لیا اور تشدد شروع کر دیا دوران تشدد ویڈیو بھی بنائی جس پر بقیہ ملازمین نے SHOکو صورت حال سے آگاہ کیا جس پر وہ مزید نفری لے کر موقع پر پہنچ گئے لیکن مسلح افراد نے فائرنگ اور کلہاڑیوں کے وار کرکے تھانیدار خلیل آحمد بذدار،حوالدار سمیع اللہ محمد اقبال اور محمد علی زخمی کو زخمی کر دیا ان حالات پر ڈی ایس پی تونسہ مزید نفری لے کر موقع پر پہنچ گئے مگر تمام مسلح افراد فرار ہونے میں کامیاب ہو گئے پولیس نے مقدمہ درج کرکے کاروائی شروع کر دی ہے۔

مزید :

ملتان صفحہ آخر -