مزدوروں کو فاقوں سے بچانے کیلئے عملی اقدامات کئے جائیں، علی حسن گیلانی

  مزدوروں کو فاقوں سے بچانے کیلئے عملی اقدامات کئے جائیں، علی حسن گیلانی

  

اُوچ شریف (نمائندہ پاکستان)مزدوروں کے عالمی دن کے موقع پر سابق ایم این اے و رہنماء پاکستان پیپلز پارٹی مخدوم سید علی حسن گیلانی نے کہا ہے کہ کرونا وائر س نے عالمی معیشت کو تباہ کرکے رکھ دیا ہے،لاکھوں مزدور فاقہ کشی سے مر رہے ہیں اور حکومت زبانی جمع خرچ اور اعلانات کرنے میں مصروف ہے،محنت کش طبقہ کو بھوک سے بچانے کیلئے فوری طور پر عملی(بقیہ نمبر52صفحہ6پر)

اقدامات کئے جائیں صنعتیں اور کاروبار بند ہونے سے دنیا بھر میں سب سے زیادہ نقصان مزدور طبقے کا ہوا ہے عالمی وبا سے بچ جانے والے مزدور بھوک کی وجہ سے موت کے منہ میں جا رہے ہیں حکومت نے مزدوروں اور کسانوں کو کوئی ریلیف نہیں دیا ہرطرف مہنگائی اور بیروزگاری کی وجہ سے عوام پریشانیوں اور شدید مشکلات میں گھرے ہوئے ہیں۔لوگوں کے گھروں کے چولہے بجھ رہے ہیں اور لاکھوں مزدوروں کے گھروں میں فاقہ کشی کی نوبت آگئی ہے،ان حالات میں ضروری ہے کہ حکومت ہنگامی اقدامات کرے اور غریب محنت کشوں کو موت کے منہ میں جانے سے بچانے کیلئے ان کی عملی مدد کی جائے خاص طور پر دیہاڑی دار مزدوروں کے گھروں میں راشن پہنچانے کا فوری انتظام کیا جائے صحافیوں سے گفتگو کرتے ہوئے انہوں نے مزید کہا کہ لیبر قوانین اور سماجی قوانین کا دائرہ ان تک بڑھایا جائے لیبر قوانین کی خامیاں دور کی جائیں تمام مزدوروں کو سوشل سیکورٹی لازمی فراہم کی جائے تاکہ تعلیم اور علاج سے کوئی محروم نہ ہو۔انہوں نے کہاکہ قادیانیوں کو غیر مسلم قرار دئیے جانے کے 46سال بعد کابینہ نے انکو قومی اقلیت کمیشن میں شامل کرنے کی منظوری دیکر اہل ایمان کے جذبات کو ٹھیس پہنچائی ہے قادیانی کافر ہیں قادیانی پاکستان کے آئین اور اقلیت قرار دئیے جانے کے آئینی فیصلے کو نہیں مانتے اس لیے کسی بھی سرکاری اعلیٰ اداروں میں انکی شمولیت خطرہ ہے حکومت مسلمانوں کے جذبات سے نہ کھیلے۔

علی حسن گیلانی

مزید :

ملتان صفحہ آخر -