ہندو مسلمانوں کو زندہ درگور کررہے ہیں،چودھری الطاف شاہد

  ہندو مسلمانوں کو زندہ درگور کررہے ہیں،چودھری الطاف شاہد

  

لاہور(پ ر)پاک سر زمین پارٹی برطانیہ کے صدرچوہدری محمد الطاف شاہد نے کہا ہے کہ مودی سرکارانسانیت اوراخلاقیات سے نابلد ہے۔اسلامی ملکوں کی قیادت بھارتی مسلمانوں کوبھارتی بربریت اورمعاشی استحصال سے بچانے کیلئے اپنا کردار ادا کرے۔ انتہاپسندہندوؤں نے سات دہائیوں میں مسلمانوں کوزندہ درگورکرنے میں کوئی کسرنہیں چھوڑی۔اب ان جنونیوں اوردرندوں نے بیگناہ مسلمانوں کوانتقام کانشانہ بنانے کیلئے کروناکا جوازڈھونڈلیا ہے۔ اپنے ایک بیان میں چوہدری محمد الطاف شاہد نے مزید کہا کہ یقینا مادہ پرست عالمی ضمیر کوکشمیریوں سمیت بھارتی مسلمانوں کے ساتھ کوئی ہمدرد ی نہیں ہوسکتی،انہیں انسانیت سے زیادہ بھارت کی بڑی مارکیٹ اوروہاں منفعت بخش تجارت عزیز ہے۔دنیا مقتدرقوتوں کے دوہرے معیار کی متحمل نہیں ہوسکتی۔انہوں نے کہا کہ بھارتی مسلمانوں کوانتہاپسندہندوؤں کے تشدد اور تعصب سے بچانے کیلئے اقوام متحدہ کواپناتعمیری کرداراداکرناہوگا۔ شاید اب تک دنیاکا کوئی بھی ملک کرونا وبا سے نہ بچاہو لہٰذاء بھارت میں کرونا وبا کومسلمانوں کے ساتھ منسوب کرنایقینا بدترین تعصب اورجہالت ہے۔انہوں نے کہا کہ انتہاپسند ہندوؤں نے سات دہائیوں سے بھارت کومسلمانوں کیلئے مقتل گاہ بنایاہوا ہے۔بھارت کی مودی سرکار سے کشمیریوں سمیت مسلمانوں کے قتل عام کاحساب لیاجائے۔انہوں نے کہا کہ گائے کی پوجاکرنے والے جاہل ہندو مسلمانوں کے خون سے پیاس بجھاتے ہیں۔دنیابھر مسلمان ماہ رمضان کی عبادات میں مصروف ہیں لیکن بھارت میں اہل اسلام مساجد جاسکتے ہیں اورنہ انہیں کاروبار کرنے کی آزادی ہے۔انہوں نے کہا کہ متعصب ہندوسبزی فروش مسلمانوں کودھتکار رہے ہیں،ان سے کوئی ہندو سبزی خریدنے کیلئے تیار نہیں ہے۔بھارت میں مسلمان گھٹ گھٹ کرجی اورایڑیاں رگڑرگڑ کرمررہے ہیں،بھارتی عدالت عظمیٰ بھی خاموش ہے۔

مزید :

میٹروپولیٹن 1 -