ذخیرہ اندوزوں کو سخت سزاؤں کا سامنا کرناپڑیگا،عبدالعلیم خان

  ذخیرہ اندوزوں کو سخت سزاؤں کا سامنا کرناپڑیگا،عبدالعلیم خان

  

لاہور(لیڈی رپورٹر)سینئر ووزیر خوراک پنجاب عبدالعلیم خان نے کہا ہے کہ پنجاب کابینہ نے گندم کی ذخیرہ اندوزی کو بھی حالیہ آرڈیننس میں شامل کر لیا ہے جس کے تحت بنیادی اشیاء ذخیرہ کرنے والوں کو سخت سزاؤں کا سامنا کرنا ہوگا اور3سال قید اور بھاری جرمانے بھگتنا ہوں گے۔انہوں نے واضح کیا کہ گندم کی ذخیرہ اندوزی کے خلاف پنجاب بھر میں سخت کاروائیاں جاری ہیں اور ہر ضلع میں مقامی انتظامیہ اور حساس اداروں کے تعاون سے چھاپے مارے جا رہے ہیں اور اب تک کی پیش رفت کے مطابق پنجاب کے6اضلاع ڈیرہ غازی خان، رحیم یار خان، پاکپتن، بہاولنگر،منڈی بہاؤ الدین اور لاہور اضلاع میں ذخیرہ کی گئی بھاری مقدار میں کروڑوں روپے کی گندم پکڑی گئی ہے جہاں گوداموں کو سیل کر کے گندم نہ صرف محکمہ خوراک قبضے میں لے چکا ہے بلکہ مجرموں کے خلاف قانون کے مطابق سخت ترین کاروائی عمل میں لائی جا رہی ہے۔

سینئر وزیر عبدالعلیم خان نے کہا کہ ذخیرہ اندوزی کے خلاف اس مہم کو جاری رکھا جائے گا اور کسی سفارش اور سیاسی دباؤ کو خاطر میں نہیں لائیں گے۔انہوں نے کہا کہ گندم کی مصنوعی قلت لانے کی ہرگز اجازت نہیں دیں گے اور ایسی کوشش کرنے والوں سے آہنی ہاتھوں سے نمٹا جائے گا۔عبدالعلیم خان نے کہا کہ صوبے میں گندم خریداری مہم کامیابی سے جاری ہے،انشاء اللہ نہ صرف طے شدہ ہدف جلد پورا کریں گے بلکہ تخمینے سے زیادہ گندم کی خرید بھی عمل میں لائی جائے گی تاکہ کسی بھی قسم کی نا گہانی صورتحال کا مقابلہ کیا جا سکے اور برادر صوبوں کی ضرورت بھی پوری ہو سکے۔ سینئر و وزیر خوراک عبدالعلیم خان نے زور دے کر کہا کہ محکمہ خوراک بھی اس سلسلے میں مکمل چوکنا ہے اور کہیں کسی قسم کی غفلت برداشت نہیں کی جائے گی۔

مزید :

میٹروپولیٹن 1 -