کپڑے ادھارنہ دینے پر رکشہ کوآگ لگادی

کپڑے ادھارنہ دینے پر رکشہ کوآگ لگادی

  

شیخوپورہ(بیورورپورٹ)تھانہ صدر کے علاقہ کوٹ رنجیت کی آبادی ذولقر نین ٹاؤن میں تین اوباش نوجوانوں نے ادھار کپڑا نہ دینے کی پاداش میں غریب محنت کش اور اسکے اہل خانہ کی غیر موجودگی میں گھرکی دیواریں پھلانگ کربغیر نمبری موٹر سائیکل رکشے کو آگ لگا کرخاکستر کر دیااور موقع سے فرار ہو گئے جس پر غریب محنت کش شوکت علی نے اپنے اہل خانہ حاجراں بی بی، کاشف، قیوم علی، اور ثناء وغیرہ کے ہمراہ احتجاج کرتے ہوے میڈیا کو بتایا کہ وہ پھیری کے ذریعے کپڑے بیچنے کاکام کرتا ہے یہ کہ تین روز قبل بھی ملزمان لمبر عرف قادا نے اپنے ساتھی ڈینگی اور ایک نامعلوم شخص کے ساتھ ملکر سائل کے گودام کو آگ لگا دی تھی جس میں پڑا ہوا سائل کا 2لاکھ روپے مالیت کا کپڑا جل کر راکھ ہو گیاتھا جس کی درخواست اس نے پولیس کو دی مگر تین روز گزر جانے کے باوجود پولیس نے نہ تو کوئی قانونی کارروائی کی اور نہ ہی کسی ملزم کو پکڑا جسکا نتیجہ یہ نکلا کہ تین روز بعد پھرمذکورہ ملزمان نے یونائیٹڈ کمپنی کے آقساط پر لیے ہوے نئے موٹر سائیکل رکشہ پر پٹرول چھڑک کر آگ لگا دی۔

مزید :

علاقائی -