قادیانیو ں کو اقلیتی کمیشن میں نمائندگی دینا آئین سے غداری ہے: عالمی مجلس تحفظ

قادیانیو ں کو اقلیتی کمیشن میں نمائندگی دینا آئین سے غداری ہے: عالمی مجلس ...

  

صوابی(بیور و رپورٹ)عالم مجلس تحفظ ختم نبوت ضلع صوابی نے پاکستان تحریک انصاف کی حکومت کی جانب سے اقلیتی کمیشن میں قادیانیوں کو نمائندگی دینے کے فیصلے کو آئین پاکستان سے غداری اور دین اسلام کے خلاف ایک سازش قرار دیتے ہوئے حکومت کے اس فیصلے کو یکسر مسترد کر دیا اور کہا کہ اس کے ذریعے سے مسلمانوں کے جذبات کو ٹھیس پہنچنے کے علاوہ باعث تشویش بھی ہے۔ ان خیالات کااظہار عالمی مجلس تحفظ ختم نبوت ضلع صوابی کے امیر مولانا اعزاز الحق کی صدار ت میں ضلعی عاملہ کے ہنگامی اجلاس میں مقررین نے اپنے خطاب میں کیا جس میں ضلعی امیر کے علاوہ نائب امیر مفتی نصیر محمد حقانی، ناظم اعلی مفتی عابد وہاب، ناظم تبلیغ مولانا صابر شاہ حقانی، ناظم مالیات اول مفتی غنی الرحمن، دوم ڈاکٹر فضل رحمانی، ناظم اطلاعات فیضان الحق شاہ منصور ی و دیگر علماء نے بھی شرکت کی۔ اجلاس میں حکومت کے اس فیصلے کو مسترد کر تے ہوئے اس کی بھر پور مذمت کی گئی اور اعلان کیا کہ اگر حکومت نے اپنا فیصلہ واپس نہ لیا تو ملک بھر کے علماء اور مسلمان اس کے خلاف راست اقدام اٹھائیں گے انہوں نے کہا کہ قادیانی آئین پاکستان کو تسلیم نہیں کر تے اسی وجہ سے قادیانی آئین پاکستان کے منکر اور باغی ہے آئین پاکستان کے باغیوں کو کسی بھی آئینی ادارے میں نمائندگی دینا آئین شکنی اور دستور شکنی پر حوصلہ افزائی ہے۔ لہٰذا حکومت اپنے اس فیصلے کو فی الفور واپس لیں۔

مزید :

پشاورصفحہ آخر -