”سپنرز کیلئے لاک ڈاﺅن بہترین وقت ہے کہ وہ۔۔۔“ مشتاق احمد نے قومی سپنرز کو زبردست مشورے دیدئیے

”سپنرز کیلئے لاک ڈاﺅن بہترین وقت ہے کہ وہ۔۔۔“ مشتاق احمد نے قومی سپنرز کو ...
”سپنرز کیلئے لاک ڈاﺅن بہترین وقت ہے کہ وہ۔۔۔“ مشتاق احمد نے قومی سپنرز کو زبردست مشورے دیدئیے

  

لاہور (ڈیلی پاکستان آن لائن) سابق کرکٹر مشتاق احمد نے لاک ڈاؤن کو سپنرز کی تکنیک پر کام کرنے کیلئے بہترین وقت قرار دیتے ہوئے کہا ہے کہ سپنر کو آرٹ کیساتھ ساتھ سمارٹنس درکار ہوتی ہے، بطور سپنر وکٹ کیپر سے ربط بہت ضروری ہے۔ 

تفصیلات کے مطابق ماضی کے عظیم کھلاڑیوں کا موجودہ اور ایمرجنگ کرکٹرز کو آن لائن ٹپس دینے کا سلسلہ جاری ہے اور اس حوالے سے سپنرز کیلئے منعقدہ سیشن میں تبادلہ خیال کرتے ہوئے مشتاق احمد نے کہا کہ پاکستان میں گیند باآسانی گھومتا ہے مگر انگلینڈ، آسٹریلیا اور جنوبی افریقہ میں وکٹیں لینے کیلئے اوور سپن سے کامیابی ملتی ہے۔

انہوں نے کہا کہ عماد وسیم کی لیگ سپن بہتر ہورہی ہے جبکہ یاسر شاہ گگلی پر خاص کام کررہے ہیں، شاداب خان کے پاس ویری ایشنز ہیں انہیں طویل طرز کی کرکٹ میں کامیابی کیلئے صرف تجربہ درکار ہے۔مشتاق احمد نے لاک ڈاؤن کو سپنرز کیلئے اپنی تکنیک پر کام کرنے کیلئے بہترین وقت قرار دیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ وہ کیرئیر کے آغاز میں مرحوم عبد القادر کی نقالی میں اپنا ایکشن خراب کر بیٹھے پھر صادق محمد نے ایکشن تبدیل کرایا جس سے ان کی گگلی اور لیگ سپن مزید مؤثر ہوگئی۔

سابق لیگ سپنر نے کہا کہ 90 کی دہائی میں ٹو ڈبلیوز کے ہوتے ہوئے ٹیم میں شامل کسی بھی باؤلر کیلئے وکٹیں لینے آسان نہیں تھا مگر انہوں نے کبھی ہار نہیں مانی۔سابق کرکٹر نے کہا کہ سپنر کو آرٹ کیساتھ ساتھ سمارٹنس درکار ہوتی ہے، بطور سپنر وکٹ کیپر سے ربط بہت ضروری ہے۔

انہوں نے کہا کہ وہ معین خان کے ساتھ مل کر حریف بلے بازوں کو اپنی سپن کے جال میں پھنسا کر پویلین کی راہ دکھاتے تھے اور کیرئیر کے مشکل وقت میں تنقید سننے کی بجائے اپنی حکمت عملی بناتے تھے۔ انہوں نے کہا کہ وہ ایک مزدور کے بیٹے تھے اور انہوں نے اپنے والد سے کبھی ہار نہ ماننا سیکھا۔

مزید :

کھیل -