کورونا وائرس کے مریضوں کے لیے خصوصی ہوٹل، جہاں مریضوں کو کسی انسان کا سامنا بھی نہ کرنا پڑے، روبوٹ خدمت کریں

کورونا وائرس کے مریضوں کے لیے خصوصی ہوٹل، جہاں مریضوں کو کسی انسان کا سامنا ...
کورونا وائرس کے مریضوں کے لیے خصوصی ہوٹل، جہاں مریضوں کو کسی انسان کا سامنا بھی نہ کرنا پڑے، روبوٹ خدمت کریں

  

ٹوکیو(مانیٹرنگ ڈیسک) دنیا بھر میں کورونا وائرس کے مریضوں کو قرنطینہ میں رکھنے کے انتظامات کیے گئے ہیں لیکن جاپان نے اس حوالے سے جو انتظام کر رکھا ہے، سن کر آپ دنگ رہ جائیں گے۔ڈیلی سٹار کے مطابق جاپان میں حکومت نے ہوٹلوں میں قرنطینہ سنٹرز قائم کر رکھے ہیں اور وہاں انسانی عملے کو وائرس سے محفوظ رکھنے کے لیے ان کی جگہ مہمانوں(مریضوں) کی خدمت کے لیے روبوٹس تعینات کیے گئے ہیں۔

گزشتہ روز دارالحکومت ٹوکیو کے اپا ہوٹل اینڈ ریزارٹ میں اس نوع کے قرنطینہ سنٹر کا افتتاح کیا گیا۔ یہ افتتاح ٹوکیو کی گورنر یوریکو کوئیکے نے کیا۔ افتتاح کے بعد گورنر یوریکو نے کمروں میں خدمت پر مامور روبوٹس کے ساتھ ملاقات بھی کی۔ جاپانی میڈیا کے مطابق اس موقع پر ایک روبوٹ نے گورنر یوریکو سے کہا ”میں آپ کی جلد صحت یابی کے لیے دعا کرتا ہوں۔“ اس کے جواب میں گورنر نے کہا ”آئیں ہم مل کر اس وباءکو روکنے جدوجہد کریں۔“

رپورٹ کے مطابق جاپانی حکومت نے ہسپتالوں اور طبی عملے کا بوجھ کم کرنے کے لیے ہوٹلوں میں قرنطینہ سنٹر بنانے کا فیصلہ کیا ہے۔ ان سنٹرز میں کورونا وائرس سے متاثرہ ایسے افراد کو رکھا جائے گا جن میں علامات زیادہ سنگین نہیں ہوں گی۔ جن میں علامات سنگین ہوں گی انہیں ہنوز ہسپتالوں میں ہی زیرعلاج رکھا جائے گا۔ ان ہوٹلوں میں صفائی کرنے والے ورکرز، ویٹرز اور دیگر ایسے سٹاف کی جگہ روبوٹ تعینات کیے گئے ہیں جنہیں مریضوں کے ساتھ رابطہ کرنا پڑسکتا ہے۔

مزید :

کورونا وائرس -